.

مصری سکیورٹی حکام نے آئندہ چوبیس گھنٹے اہم قرار دے دیے

مرسی اور جمہوریت کے حامیوں کا دھرنا ختم کرنے کا وقت آن پہنچا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصری سکیورٹی سے متعلق ادارے آئندہ چوبیس گھنٹوں کے دوران معزول صدر مرسی اور جمہوریت کا مطالبہ کرنے والے اخوانی دھرنے کے شرکاء کو منتشر کرنے اور دھرنا ختم کرنے کا عندیہ دے رہے ہیں۔ عالمی خبر رساں اداروں کے سینیئر پولیس افسران کے حوالے سے رپورٹ کیا گیا ہے کہ دھرنا ختم کرنے کے لیے سکیورٹی اداروں کا آپریش امکانی طور پرآج پیر کے روز شروع ہو گا۔

سکیورٹی ذرائع کے مطابق فورسز کی بھاری نفری صبح سویرے ہی دھرنے کے مرکز اور آس پاس کے علاقے کو گھیرے میں لینے کی تیاری کیے ہوئے ہیں۔ ان ذرائع کا کہنا ہے کہ فورسز کے آپریش کے نتیجے میں آخر کار ایک ماہ اور آٹھ دن سے دھرنے میں بیٹھے مرسی کے حامی منتشر ہو جائیں گے۔

سرکاری ذرائع کے مطابق حکومت رمضان اور عید الفطر کے گزرنے کا انتظار کر رہی تھی تاکہ مقدس مہینے کے دوران بد مزگی نہ بڑھے۔ اس آپریشن کے لیے وقت کا تعین عبوری وزیر داخلہ اور دیگر متعلقین کے درمیان مشاورت سے ہوا ہے۔

واضح رہے کہ متعدد مغربی اور عربی سفارتکاروں اور مصالحت کاروں نے مصری حکام پر زور دیا تھا کہ ہزاروں افراد کا یہ پر امن دھرنا طاقت کے استعمال سے ختم نہ کیا جائے۔