فوجی اقتدار کے خاتمے کے لیے پرعزم ہیں: ترجمان اخوان المسلمون

مصر میں مرنے والوں کی تعداد 525 ہو گئی: مصری وزارت صحت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مصر میں حکمران جماعت کے مادر جماعت اور اہم سیاسی ''سٹیک ہولڈر'' اخوان المسلمون نے سکیورٹی فورسز کے بھر پور کریک ڈاون اور بھاری جانی نقصان کے باوجود جمہوری طریقے سے منتخب ہونے والے پہلے مصری صدر ڈاکٹر مرسی کی صدارت پر بحالی اور فوجی بغاوت کو'' ریورس''کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ پرامن سیاسی جدوجہد جاری رہے گی۔

اخوان المسلمون کے ترجمان جہاد الحداد نے'' ٹوئٹر'' کے ذریعے جاری کیے گئے بیان میں جمرات کے روز کہا ہے کہ ''ہم ہمیشہ پرامن رہیں گے، ہم آمریت کے خلاف مضبوط، مزاحم اور پرعزم ہیں۔'' ترجمان نے مزید کہا '' ہم فوجی اقتدار کو گرانے کےلیے دھکا لگاتے رہیں گے اور پیچھے نہیں ہٹیں گے۔''

واضح رہے اخوان کے ترجمان کا یہ بیان ایسے موقع پر سامنے آیا ہے جب مصری وزارت صحت کے حکام نے جمعرات کے روز میڈیا کو بتایا ہےکہ اب تک جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 525 ہو گئی ہے۔

وزارت صحت کے ذمہ دار خالد الخطیب کے مطابق بدھ کے روز کم از کم 525 عام شہری مارے گئے ہیں جبکہ 43 پولیس اہلکار لقمہ اجل بنے ۔

اخوان کے ترجمان کے مطابق اس کے باوجود وہ خاموش نہیں بیٹھیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں