.

انتہا پسندی کے خلاف جنگ جاری رہے گی: عبوری حکومت

مصر کے عوام پہلے سے زیادہ متحد ہیں۔ سیاسی مشیر مصطفی حجازی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کی عبوری حکومت نے خبردار کیا ہے کہ اخوان المسلمون اور مرسی کے حامی پر امن احتجاج کے بجائے تشدد میں ملوث ہو چکے ہیں اس لیے دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خلاف جنگ جاری رکھے گی۔ عبوری حکومت کی جانب سے یہ اعلان عبوری حکومت کے سیاسی مشیر مصطفی حجازی نے ایک پریس کانفرنس کے دوران کیا ہے۔

مصطفی حجازی کا کہنا تھا '' جو مظاہرین مرسی کی بحالی کا مطالبہ کر رہے ہیں انہیں دوبارہ ہوش و حواس کی طرف لوٹ کر ان سے کام لینا چاہیے۔ اب مصر کی طرف سے انتہا پسند قوتوں کے خلاف اعلان جنگ ہو چکا ہے۔ ''

حکومتی مشیر نے ملک میں گرجوں، تعلیمی اداروں، عجائب گھروں، سرکاری املاک کو نزر آتش کرنے اور عام لوگوں پر فائرنگ کرنے کو دہشت گردی قرار دیتے ہوئے کہا مصر کے لوگ اب پہلے سے زیادہ متحد ہیں۔ اس لیے فوج کی طرف سے دیے گئے''روڈ میپ'' پر پوری طرح عمل ہو گا۔''