جنرل سیسی کے''روڈ میپ'' پر فرانس اور سعودیہ میں اتفاق

فرانسیسی صدر سے ملاقات کے بعد وزیر خارجہ سعودالفیصل کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب اور فرانس نے اس امر اتفاق کر لیا ہے کہ مصر میں فوج کی طرف سے دیے گئے'' روڈ میپ ''کو موقع دیا جائے۔ یہ بات سعودی وزیر خارجہ سعودالفیصل نے فرانس کے صدر فراسشیو ہالینڈے سے ملاقات کے بعد'' العربیہ ''کو بتائی ہے۔ مصری فوج کے سربراہ نے یہ'' روڈ میپ'' منتخب صدر ڈاکٹر محمد مرسی کو تین جولائی کو برطرف کرنے کے بعد جاری کیا تھا۔

''روڈ میپ'' میں عارضی طور پر مصر کا آئین معطل کرتے ہوئے جنرل عبداالفتاح السیسی نے قبل از وقت نیا صدارتی انتخاب کرانے کا اعلان کیا تھا۔ اس''روڈ میپ'' کے مطابق صدر مرسی کے دور میں آئین میں کی جانےوالی ترامیم کا بھی از سر نو جائزہ لیا جانا ہے۔

سعودالفیصل کا کہنا تھا صدر مرسی کی برطرفی عوامی مطالبے سے کی گئی تھی۔ وزیر خارجہ کے مطابق یہ معمولی بات نہ تھی کہ مرسی کی برطرفی کے لیے تین کروڑ مصری عوام سڑکوں پر آ گئے تھے۔ اندرونی سلامتی خطرے میں تھی۔ سعودی وزیر خارجہ نے کہا آزادی اظہار کو بھی جارحانہ نہیں ہونا چاہیے۔

''العربیہ'' کے نمائندے کے مطابق فرانس کے صدر نے مصر میں تشدد اور قتل و غارت گری کو ناقابل قبول قرار دیا۔ واضح رہے اتوار کے روز بھی سرکاری ذرائع کے مطابق مصر میں مرنے والوں کی تعداد 80 کو چھو گئی ہے جبکہ مزید ساڑھے پانچ سو شہری پورے ملک میں زخمی ہو گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں