.

دو سعودی طیاروں کی 100ٹن طبی امدادی سامان لے کر مصر آمد

زخمی مصریوں کے علاج کے لیے تین فیلڈ اسپتال قائم کیے جائیں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی جانب سے بھیجے گئے طبی امدادی سامان سے لدے دو طیارے مصر پہنچ گئے ہیں.

سعودی مملکت نے تین فیلڈ اسپتالوں کے قیام کے لیے درکار ایک سو ٹن وزنی طبی سامان اور ادویہ بھیجی ہیں۔ قاہرہ میں متعین سعودی سفیر احمد عبدالعزیز قطان اور مصر کے فوجی حکام نے منگل کو دارالحکومت کے مشرق میں واقع ایک فوجی اڈے پر طبی امدادی سامان وصول کیا ہے۔

سعودی عرب مصری سکیورٹی فورسز کے برطرف صدر محمد مرسی کے حامیوں کے خلاف گذشتہ ایک ہفتے کے دوران خونریز کریک ڈاؤن میں زخمی ہونے والے سیکڑوں افراد کے علاج معالجے کے لیے فیلڈ اسپتال قائم کررہا ہے۔ ایک فوجی عہدے دار نے بتایا ہے کہ ''فیلڈ اسپتال جدید آلات سے آراستہ ہوں گے اور ان میں آپریٹنگ رومز بھی ہوں گے''۔

سفیر عبدالعزیز قطان نے بتایا کہ آیندہ دنوں میں سعودی عرب سے طبی امداد مصر بھیجنے کا سلسلہ جاری رہے گا۔ سعودی عرب کی سرکاری خبررساں ایجنسی ایس پی اے نے اتوار کو اطلاع دی تھی کہ مصر کو طبی آلات اور سازوسامان بھیجنے کا مقصد برادر مصری عوام کو مدد بہم پہنچانا ہے اور وہاں کے اسپتالوں پر دباؤ میں کمی لانا ہے''۔