.

تہران : کیمیائی ہتھیاروں کے سدباب کیلیے عالمی برادری طاقت استعمال کرے

شام میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کی مذمت کرتے ہیں: حسن روحانی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کے صدر حسن روحانی نے شام میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس کا استعمال کسی نے بھی کیا ہو اس کے سد باب کے لیے عالمی برادری کو طاقت بروئے لانی چاہیے۔ انہوں ان خیالات کا اظہار شام میں کیمیائی ہتھیاروں سے ہونے والی معصوم شہریوں کی ہلاکت کے بارے میں گزشتہ روز بات کرتے ہوئے کیا ہے ۔

ایرانی صدر نے اس امر کی تصدیق کی ہے کہ شام میں 1300 سے زائد ہلاکتیں کیمیائی ہتھیاروں ہی کی وجہ سے ہوئی ہیں۔ اس واقعے پر ایران کی طرف سے یہ خیالات پہلی مرتبہ سامنے آئے ہیں۔ اس سے پہلے ایران شامی باغیوں کو ہی ذمہ دار قرار دے چکا ہے۔ لیکن اب ایران نے کسی مخصوص فریق پر انگلی اٹھانے کی بجائے براہ راست اس واقعے پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔

حسن روحانی کا کہنا ہے کہ '' ہم مکمل اور پرزور انداز میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کی مذمت کرتے ہیں۔'' ان کا مزید کہنا تھا '' اسلامی جمہوریہ ایران نے نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ اپنی تمام تر طاقت کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے خلاف بروئے کار لائے ،خواہ یہ دنیا کے کسی بھی حصے میں استعمال کیے گئے ہوں۔''

ایران کے صدر کا کہنا تھا '' 1980 اور 1988 کی عراق ایران جنگ کے دوران خود ایران بھی کیمیائی ہتھیاروں کا نشانہ بن چکا ہے۔ اس لیے ہم مکمل اور واضح طور پر کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کی مذمت کرتے ہیں۔''