.

گھریلو ملازماوں کے لیے سات لاکھ سعودی ویزوں کا اعلان

حالیہ اقدامات سے غیر قانونی ہتھکنڈوں میں خاطر خواہ کمی واقع ہو گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں گھریلو ملازماوں کے حوالے سے پیدا شدہ بحران پر قابو پانے کے لیے سعودی حکومت نے دس بھرتی کمپنیوں کو آگاہ کیا ہے کہ انہیں گھریلو ملازم خواتین سمیت غیر ملکی کارکنوں کیلیے سات لاکھ ویزوں کا اجرا کیا جائے گا۔

سعودی عرب میں بھرتی کمپنیوں کے نمائندوں اور سرکاری حکام کے درمیان اجلاس میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ گھروں میں کام کرنے والی غیر ملکی خواتین کیلیے ویزوں کی متعین تعداد کی منظوری دے گی ۔ اس موقع پر سعودی عرب کے حالیہ اقدامات کی تحسین کی گئی کہ ان اقدامات سے غیر قانونی ہتھکنڈوں میں کمی واقع ہو گی ۔

بھرتی کمپنیوں کی جانب سے غیر ملکی گھریلو ملازمین کے لیے تنخواہوں کے شاندار پیکج متعارف کرائے جا رہے ہیں، جن میں ماہانہ تنخواہ 1500 سعودی ریال جبکہ غیر ملکی ملازمین کو اپنے ویزے کی رقم کے ساتھ ساتھ علاج معالجے اور اقامہ کی رقم سے بھی مستثنی قرار دیا گیا ہے۔غیر ملکی ملازمین کی سہولت کو مدنظر رکھتے ہوئے انہیں ہفتہ وار چھٹی کے دن بھی کام کرنے کے عوض بھاری معاوضہ ادا کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ غیر قانونی طور پر رکھے گئے ملازمین کی شرح تنخواہ حالیہ کچھ عرصے سے آسمان کو چھو رہی ہے۔ وزارت نے بھرتی کمپنیوں پر اس سلسلے میں انتظامی امور سمیت دیگر انتظامات کو جلد از جلد نمٹانے پر زور دیا ہے۔