کیمیائی ہتھیار استعمال کرنے پر کوئی شک نہیں رہا: جوبائیڈن

شام کے خلاف طاقت کا استعمال اب دنوں کی بات ہے: مغربی سفیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شام میں کیمیائی ہتھیاروں کے خلاف امکانی امریکی حملے کے ممکنہ اتحادی اور مغربی ممالک کے سفیروں نےچند دنوں میں شام پر حملے کا اشارہ دیدیا ہے۔ مذکورہ ملکوں کے سفیروں نے اس بات کا اشارہ شامی اپوزیشن کے رہنماوں کے ساتھ ہونے والی حالیہ ملاقاتوں کے دوران کیا ہے۔

آسٹریلیا جو آئندہ دنوں میں سلامتی کونسل کی صدارت سنبھالنے والا ہے نے بدھ کے روز شام کے خلاف امریکی عزم کی مکمل حماِت کا اعلان کیا ہے۔ آسٹریلیا نے کہا ہے اگر اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل شام کے خلاف کارروائی کی حمایت پر اتفاق میں ناکام رہی تو بھی شام کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ واضح رہے شام کے خلاف کارروائی کے لیے بدھ کی شام قرارداد سلامتی کونسل میں پیش کیے جانے کا امکان ہے۔

اس لیے امریکی وزیر دفاع چک ہیگل نے امریکا کے ایشیائی شراکت داروں سے بھی اس معاملے پر تبادلہ خیال کیا ہے، جس سے امریکا کی اس خطے میں تزویراتی دلچسپی کا اظہار ہوتا ہے، تاہم شام کے خلاف طاقت کے استعمال کا امکان مذاکرات پر غالب ہو رہا ہے۔

دریں اثناء اوباما انتظامیہ کے اہم ترین رکن اور امریکی نائب صدر جو بائیڈن نے پہلی مرتبہ اس اہم معاملے میں دوٹوک کہا ہے کہ '' اس امر میں کوئی شبہ نہیں ہے کہ شام نے کیمیائی ہتھیار استعمال کیے ہیں اور اس حوالے سے اس کو جواب دینا ہو گا۔ ''

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں