شامی افواج نے'' کیموفلیج ''سرگرمیاں شروع کر دیں

دمشق کے ہوائی اڈے سے فوجی دستوں کی شہروں میں منتقلی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

شام کی سرکاری افواج نے امکانی امریکی حملے کے پیش نظر '' کیمو فلاج'' کی غرض سے اپنی پوزیشنیں تبدیل کرنا شروع کر دی ہیں۔

عینی شاہدین کے مطابق شامی فوج نے دمشق بین الاقوامی ہوائی اڈے سے اپنی نفری کو ہٹا کر قریبی شہر حرنا میں پڑاو کرنا شروع کر دیا ہے۔ عینی شاہدین کے مطابق ائیر پورٹ سے حرنا شہر کی طرف لدے ہوئے فوجی ٹرک صبح سویرے بھی جاتے دیکھے گئے ہیں۔

شامی ذرائع کے مطابق دنشق ائیر پورٹ میں فوج کے تین فضائی اڈے بروئے کار ہیں۔ ان ذرائع کے مطابق فوجی دستوں کی ائیر پررٹ کے علاقے سے منتقلی کا عمل رات سے شروع تھا، اس مقصد کے لیے رات کو ائیر پورٹ کی بتیاں بجھا دی گئی تھیں۔

شامی اپوزیشن ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ سرکاری فوجی دستوں نے خود کو اپنے طے شدہ فوجی مراکز کے بجائے شہری آبادیوں میں منتقل کر لیا ہے تاکہ غیر ملکی افواج کی بمباری سے افواج کا نقصان نہ ہو۔ تاہم یہ ابھی واضح نہیں، سرکاری فوجی کمان کے اہم دفاتر بھی اب سول علاقوں سے آپریٹ ہوں گے یا وہ اپنی جگہ پر رہیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں