.

شام کیخلاف عالمی اتحاد کیلیے کوشش جاری ہے: چک ہیگل

پارلیمنٹ کے فیصلے کے بعد بھی برطانیہ و دیگر سے رابطے میں ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزیر دفاع چک ہیگل نے کہا ہے کہ ان کا ملک برطانوی پارلیمنٹ کے مخالفانہ ووٹ کے بعد بھی شام کے خلاف کارروائی کے لیے ایک عالمی اتحاد وجود میں لانے کے لیے کوشاں ہے۔ وزیر دفاع نے اس امر کا اظہار جمعہ کے روز فلپائن کے دورے کے موقع پر کیا ہے۔

چک ہیگل نے کہا '' ہماری اپروچ یہ کہ بین الاقوامی اتحاد کے لیے کوشش جاری رکھی جائے تاکہ کیمیائی ہتھیاروں کے خلاف مل کر کارروائی کریں، میرے خیال میں آپ دیکھ رہے ہیں متعدد ملکوں نے کھل کر کیمیائی ہتھیاروں کے خلاف پوزیشن لی ہے۔''

انہوں نے صدر اوباما اور امریکی انتظامیہ کے ہدف کا حوالہ دیتے ہوئے کہا '' جو بھی فیصلہ کیا گیا ہے وہ بین الاقوامی اتحاد اور مشرکہ کوششوں کا ہے۔ واشنگٹن برطانوی پارلیمنٹ کے اس'' فیصلے کہ برطانیہ کو شام کے خلاف کارروائی میں حصہ نہیں بننا چاہیے'' کا احترام کرتا ہے، تاہم امریکا برطانیہ کے ساتھ مشاورت جاری رکھے ہوئے ہیں ۔ اسی طرح دوسرے اتحادیوں کے ساتھ بھی صلاح مشورہ جاری ہے۔''

ایک سوال پر چک ہیگل نے کہا'' ہر قوم پر یہ ذمہ داری ہے کہ وہ اپنے فیصلے خود کرے۔ '' ایک اور سوال کے جوا ب میں انہوں کہا '' میں اندازے لگانے اور مفروضوں پر بات کرنے کے حق میں نہیں بلکہ حقائق کو مد نظر رکھتا ہوں ، میرے علم نہیں ہے کہ اسد رجیم کے موقف میں کسی ایشو پر کوئی تبدیلی آئی ہے ۔''