کیمیائی معائنہ کار دمشق سے واپس، حتمی رپورٹ کی تیاری شروع

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کو ابتدائی رپورٹ آج پیش کریں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

کیمیائی ہتھیاروں کے معائنہ کے لیے دمشق کے نواح میں مصروف رہنے والے اقوام متحدہ کے 13 معائنہ کار واپس چلے گئے ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ یو این معائنہ کاروں نے موقع سے ضروری مواد کے مختلف نمونے جمع کرنے کے علاوہ متاثرین اور ان کی دیکھ بھال کرنے والوں سے معلومات حآصل کر کے اپنا کا٘م مکمل کر لیا ہے۔

امکان ظاہر کیا گیا ہے کہ دو ہفتوں تک ان حاصل کیے گئے نمونہ جات سے حتمی نتائج اخذ کیے جا سکتے ہیں۔ یہ بات سیکرٹری جنرل بان کی مون نے سلامتی کونسل کے ارکان کو بتائی ہے۔

اقوام متحدہ کے ماہر معائنہ کار ایکے سیلسٹروم کی قیادت میں معائنہ کاروں کی ٹیم گزشٹہ دمشق پہنچی تھی۔ مبینہ کیمیائی ہتھیاروں کے باعث ہلاک ہونے والوں کی تعداد امریکا کے مطابق 1429 ہے جن میں 426 بچے بھی شامل ہیں۔ ان کی ہلاکت کی ابتدائی طور پر سامنے آنے والی وجوہات اور اپنی ٹیم کی ورکنگ کے حوالے سے ایکے سیلسٹروم رات گئے تک سیکرٹری جنرل کو رپورٹ پیش کر سکتے ہیں۔

ادھر دمشق میں اقوام متحدہ کے معائنہ کاروں کی روانگی کو امکانی امریکی حملے کا پیش خیمہ بھی بتایا جا رہا ہے۔ تاہم صدر باراک اوباما نے متوقع امریکی کارروائی کو سکڑی سمٹی اور محدود کارروائی سے تعبیر کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں