.

سعودی عرب کی فلسطینی شہروں کے لیے 20 کروڑ ڈالر کی امداد

امداد سے مظلوم فلسطینی عوام کی حوصلہ افزائی ہو گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے فرمانروا شاہ عبد اللہ بن عبدالعزیز کی جانب سے فلسطینی شہروں کی تعمیر و ترقی کے لیے 20 کروڑ ڈالر کی امداد کے ایک نئے پیکج کی منظوری دی گئی ہے۔

شاہ عبد اللہ کی جانب سے فراہم کی جانے والی امداد سے اسرائیلی جارحیت کے مقابلے میں فلسطینی عوام کا حوصلہ بلند ہوگا اور تل ابیب کے حملوں سے تباہ حال شہروں کی تعمیر اور بحالی میں مدد ملے گی۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق ریاض حکومت کی جانب سے فلسطینی شہروں کے لیے امداد کا اعلان مکہ مکرمہ میں منعقدہ "اسلامک سٹیز آگنائزیشن" کی تیرہویں سالانہ کانفرنس کے دوران کیا گیا۔ یہ تنظیم اسلامی دنیا کے پسماندہ شہروں اور غریب شہریوں کی مدد کے لیے پچھلے کئی سال سے کام کر رہی ہے۔

کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سعودی عرب کے وزیر برائے دیہی ترقی شہزادہ ڈاکٹر منصور بن متعب بن عبدالعزیز نے کہا کہ ان کا ملک مظلوم فلسطینی عوام کی مدد جاری رکھے گا۔

انہوں نے کہا کہ سعودی عرب کی جانب سے "اسلامک سٹیز اینڈ کیپٹلز آرگنائزیشن" کے ذریعے فلسطینی شہروں کے لیے دی جانے والی امداد کئی شعبوں میں خرچ کی جائے گی۔ ان میں تعمیر نو، واٹرسپلائی اسکیمیں، بجلی پیدا کرنے والے منصوبے اور سیوریج جیسے پراجیکٹ شامل ہیں۔ سعودی عرب کی فراہم کردہ امدادی رقم سے مظلوم فلسطینی عوام کو صہیونی جارحیت کے مقابلے میں ایک نیا حوصلہ اور ولولہ ملے گا۔