سعودی حکمرانوں کیخلاف اکسانے اور دہشت پر 15 سال قید

سزا پانے والے شخص سے دہشت گردانہ دستاویزات بھی برآمد ہوئی تھیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کی ایک عدالت نے سعودی حکمرانوں کے خلاف اکسانے اور تختہ الٹنے کا مطالبہ کرنے والے شخص کو پندرہ سال قید کی سزا سنائی ہے۔ عدالت کی طرف سے جمعرات کے روز کیے گئے اس فیصلے کا اعلان سعودی خبر رساں ادارے نے کیا ہے۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق ایک شخص جس کا نا م سامنے نہیں لایا گیا ہے ایسے وڈیو کلپس تیار کرتا تھا جو لوگوں کو حکومت کے خلاف ابھارنے کے کام آتے تھے۔ عدالت نے اسے پندرہ سال قید کی سزا سناتے ہوئے اس کی اس عرصے کے دوران نقل و حرکت پر بھی پابندی لگا دی ہے۔

یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ مذکورہ شخص سے القاعدہ رہنماوں کی تصاویر اور سعودی عرب کے مشرقی حصوں میں دہشت گردی کے منصوبے کے حوالے سے دستاویز بھی برآمد ہوئی تھیں۔

سزا پانے اس والے شخص سے سعودی عرب کے خلاف دستاویزی مواد کے علاوہ مذہبی علماء اور ملک کی تعلیمی پالیسی کے خلاف دستاویزی مواد بھی مو جود تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں