.

مصری وزیر داخلہ پر حملہ ہم نے کیا: سینائی جہادی گروپ

وزیر داخلہ کے ہلاک نہ ہونے کا افسوس ہے: جاری کردہ بیان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

القاعدہ سے منسلک مصر کے ایک جہادی گروپ نے عبوری وزیر داخلہ محمد ابراہیم کے قافلے پر گزشتہ دنوں ہونے والے دھماکے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔ جزیرہ نما سینائی میں موجود اس جہادی گروپ نے اس سلسلے میں ایک بیان بھی جاری کیا ہے۔

جاری کیے گئے بیان میں کہا گیا ہے کہ '' اللہ نے انصار بیت المقدس کے تمہارے بھائیوں کو اجازت دی ہے کہ قاتل عبوری وزیر داخلہ کی سکیورٹی سے متعلق تنظیموں کو فدائی مشنوں کے ذریعے منتشر کر دیں۔''

واضح رہے جمعرات کے روز مصری وزیر داخلہ اپنے گھر سے دفتر کی طرف جا رہے تھے تو نصر شہر کے علاقے میں ان کے قافلے پر کار بم دھماکہ کیا گیا، اس دھماکے سے ایک شخص ہلاک ہو گیا تھا، البتہ وزیر داخلہ محفوظ رہے تھے۔

عسکری گروپ نے اپنے جاری کردہ بیان میں اس چیز پر افسوس کا اظہار کیا ہے کہ وزیر داخلہ زندہ بچ گئے۔ معلوم ہوا ہے کہ وزیر داخلہ اور مصری فوج کے سربراہ جنرل سیسی اس گروپ کا ہدف ہیں