.

کیمیائی ہتھیاروں سے دستبرداری امریکی دھمکی کا نتیجہ نہیں: بشارالاسد

روسی تجویز پر اپنے ہتھیاروں کو عالمی نگرانی میں دینے کا فیصلہ کیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شامی صدر بشارالاسد نے واضح کیا ہے کہ انھوں نے روس کی تجویز کے بعد اپنے کیمیائی ہتھیاروں سے دستبردار ہونے کا فیصلہ کیا ہے اور یہ فیصلہ امریکا کی فوجی مداخلت کی دھمکی کا نتیجہ نہیں ہے۔

انٹرفیکس نیوز ایجنسی کے مطابق صدر بشارالاسد نے روس کے سرکاری ٹی وی روسیہ 24 چینل کے ساتھ جمعرات کو انٹرویو میں کہا کہ ’’شام روس کی وجہ سے اپنے کیمیائی ہتھیاروں کو بین الاقوامی کنٹرول میں دے رہا ہے اور اس نے امریکا کی دھمکی کے زیراثر یہ فیصلہ نہیں کیا ہے‘‘۔ ان کے اس انٹرویو کی تفصیل ابھی آٓرہی ہے۔