.

شام نے کیمیائی ہتھیار پورے ملک میں پھیلا دیے

امریکی اور اسرائیلی خفیہ اداروں کیلیے نئے ٹھکانوں تک رسائی مشکل؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام کی سرکاری افواج نے کیمیائی ہتھیاروں کو ملک کے مختلف حصوں میں پھیلانا اور محفوظ کر دیے ہیں، تاکہ امریکی فوج کے لئے ان کو ڈھونڈ نکالنا مشکل ہو جائے۔ اس امر کا انکشاف امریکی میڈیا رپورٹس میں کیا گیا ہے۔

ان رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ شام کی افواج نے تقریبا ایک سال قبل ہی ان کیمیائی ہتھیاروں کو چوبیس کے قریب مختلف مقامات پر منتقل کرنا شروع کر دیا گیا تھا۔ رپورٹ کے مطابق شامی فوج کے یونٹس نے ان ہتھیاروں کو بہت سے غیرمعروف اور چھوٹے مقامات پر بھی منتقل کیا ہے، تاکہ ان ہتھیاروں کو امریکہ کے ممکنہ حملوں کے باوجود بچایا جا سکے۔

امریکی اور اسرائیلی خفیہ اداروں کے دعوی کے مطابق کیمیائی ہتھیاروں کو چھپانے کی ان جگہوں میں سے اکثر مقامات کا علم ہے۔ مگر ایک عہدیدار کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ"ہمیں آج کے مقابلے میں چھ ماہ قبل ان کیمیائی ہتھیاروں کو چھپانے کے مقامات کے بارے میں زیادہ معلومات تھیں۔"

امریکا اور مشرق وسطیٰ کے حکومتی عہدیداروں کے حوالے سے وال سٹریٹ جنرل نے ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ شامی فوج کے ایک خفیہ یونٹ کو یہ کام سونپا گیا ہے کہ وہ زہر آلود گیسوں اور کیمیائی اسلحہ کے ذخیروں کو ملک کے مختلف حصوں میں پھیلا دے۔ ان عہدیداروں نے بتایا ہے کہ شام کی فوجی یونٹ 450 کی جانب سے یہ اقدام شام پر ممکنہ امریکی حملے کو ناکام بنا سکتی ہے