.

دبئی: آسمان سے ہن برسانے کے دعویدار نوسرباز جیل میں چکی پیسنے پر مجبور

جواری لوگوں کو پھنسانے کے لیے جنات کے استعمال کا دعویدار تھے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

دبئی پولیس نے دوغیر ملکی نوسرباز جواریوں کو حراست میں لے کر جیل منتقل کردیا ہے جو دبئی میں محنت مزدوری کی خاطر مشرق وسطی کے کاروبار مرکز کا رخ کرنے ولے عوام کو لوٹنے کے لیے مختلف حربے استعمال کرنے کے ساتھ ساتھ بیس کروڑ درہم آسمان سے برسانے کا بھی دعویٰ کررہے تھے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق نو سربازوں نے ایک مقامی شکار(شہری) کو پھنسانے کے لیے اسے"شنو" نامی ایک مہنگے ترین جوس کی ایک بوتل پیش کرنے کو کہا جس کی مالیت کم سے کم تیس ہزار درہم ہے اور ان کے بقول یہ جنات کا مرغوب مشروب ہے اور اسے پیش کرکے وہ جنات کی مدد سے آسمان سے بیس کروڑ درہم بارش کی طرح برسا سکتے ہیں۔ اس طرح دونوں نو سر باز اب تک کئی افراد کو لوٹ چکے ہیں۔
جنرل ڈیپارٹمنٹ آف کریمنل انوسٹیگیشن دبئی کے ڈائریکٹر میجر جنرل خبیر ابراہیم المنصوری نے بتایا کہ پولیس نے کارروائی کرکے دونوں نو سربازوں کو حراست میں لے لیا ہے۔ ان میں سے ایک افریقی اور دوسرا یورپی بتایا جاتا ہے۔ ملزمان کے قبضے سے مقامی اور غیر ملکی کرنسی بھی ملی ہے۔

ایک عینی شاہد نے بتایا کہ جنات کی مدد سے آسمان سے پیسے برسانے کے دعویدار جواریوں نے سادہ لوح لوگوں کو پھانسنے کا عجیب ڈھنگ اختیار کر رکھا تھا۔ جو شخص اپنی ضرورت ان کے سامنے پیش کرتا تو وہ پہلے اس کا اور اس کی والدہ کے نام سیدھے الفاظ میں لکھتے۔ پھر انہیں الٹا کر کے لکھتے پھر ناموں کے حروف کو خلط ملط کر کے عجیب عجیب حروف کی شکلیں بناتے۔ لیکن حساب کتاب کے بعد "شنو" نامی جوس کی ایک بوتل کا تقاضا کیا جاتا جسے بقول ان کے جنات کو تابع کرنے کے لیے استعمال کرتے ہیں۔