امریکی ساختہ دو جنگی طیارے یمن کے حوالے

رواں سال کے دوران ایک درجن ہیلی کاپٹر بھی فراہم کیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکا نے رواں سال یمن کو تقریبا ایک درجن ہیلی کاپٹر دینے کے علاوہ دو ریکونائزینس جنگی طیارے بھی فراہم کر دیے ہیں۔ طیا روں کی فراہمی کی تصدیق یمن کے وزیر دفاع نے کی ہے۔ یہ ریکونائزینس طیاروں کی پہلی کھیپ ہے۔

یمن کو امریکی جنگی طیاروں کی فراہمی دہشت گردی کے خلاف لڑنے کے لیے امدادی پیکج کے طور پر ہوئی ہے۔ یمن کے صدرعبدالربو منصور نے اپنے حالیہ دورہ امریکا کے دوران صدر اوباما سے ملاقات میں امریکا سے ڈرون طیاروں کی ٹیکنالوجی کا مطالبہ کیا تھا۔

واضح رہے صدر اوباما کی زیر قیادت امریکی انتظامیہ نے یمن میں جاری اپنی ڈرون طیاروں کی جنگ سے اب تک سینکڑوں جنگجووں کو کامیابی سے ہلاک کیا ہے۔

یمن کے سرکاری ٹی وی نے ان امریکی ساختہ ریکونائزینس جنگی طیاروں کی یمن آمد کے حوالے سے فوٹیج میں دکھایا ہے کہ یمنی میجر جنرل محمد نصیر ائیر بیس پر ان امریکی پائلٹوں کا خیر مقدم کر رہے ہیں جو ان طیاروں کو اڑا کر لائے ہیں اور یمنی فضائیہ کو ان طیاروں کے استعمال کی تربیت دیں گے۔

ان طیاروں کی یمن کو فراہمی اس امریکی پالیسی کا حصہ ہے جس کے تحت امریکا دہشت گردی کے خلاف ساتھ دینے والے اپنے اتحادی ملکوں کو مضبوط کرتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں