جزیرہ نما سینا میں عسکریت پسندوں کا حملہ، نو مصری فوجی زخمی

العریش شیخ زوید روڈ کھول دی گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصر کے شورش زدہ علاقے جزیرہ نما سینا میں نامعلوم مسلح افراد کے حملے میں مصری فوج کے نو اہلکار زخمی ہو گئے ہیں جبکہ فلسطینی شہر غزہ کی پٹی سے متصل شہر رفح میں نامعلوم افراد کے حملے میں ایک عام شہری کے مارے جانے کی اطلاعات ہیں۔

"العربیہ" ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مصری ملٹری پولیس پر حملہ شمالی سیناء میں مشرقی العریش کے قریب ایک بس پر کیا گیا، جس میں کئی فوجی سوار تھے۔ حملے کے بارے میں متضاد اطلاعات سامنے آئی ہیں۔ ایک اطلاع کے مطابق بس پر فائرنگ کی گئی، جبکہ ایک دوسری خبر میں بتایا گیا ہے کہ بس ایک بارودی سرنگ سے ٹکرا گئی تھی، جس کے نتیجے میں نو فوجی زخمی ہوئے ہیں۔ میڈیا کی بعض رپورٹس کے مطابق مسلح افراد نے پولیس بس پر راکٹوں سے حملہ کیا تھا۔

اخبار "الشروق" کے نامہ نگار مصطفیٰ سنجر نے جزیرہ سیناء سے ٹیلیفون پر العربیہ نیوز چینل کو بتایا کہ واقعے کے بعد سیکیورٹی حکام نے علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کر دیا ہے، تاہم آخری اطلاعات تک کسی شخص کی گرفتاری عمل میں نہیں لائی جا سکی۔ سرچ آپریشن کے دوران زمینی دستوں کے ساتھ اپاچی ہیلی کاپٹر بھی حصہ لے رہے ہیں۔

"الشروق" کے نامہ نگار کا کہنا تھا کہ فوجی بس پر حملے کے نتیجے میں زخمی ہونے والے تمام اہلکاروں کو علاج کے لیے ملٹری اسپتالوں میں منتقل کر دیا گیا ہے، تاہم تمام زخمی خطرے سے باہر ہیں۔ انہیں درمیانے اور ہلکے نوعیت کے زخم آئے ہیں۔

درایں اثناء واقعے کے بعد العریش الشیخ زوید شاہراہ عام کو کئی گھنٹے بند رکھنے کے بعد اسے کھول دیا گیا ہے، تاہم عینی شاہدین کے مطابق العریش شہر میں آپریشن کے باعث کئی سڑکوں پر ٹریفک اب بھی بند ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں