بغداد: مصروف بازاروں میں بم دھماکے، 23 افراد ہلاک

عراقی دارالحکومت کے سنی اکثریتی علاقوں میں شہریوں پر بم حملے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

عراق کے دارالحکومت بغداد میں مصروف بازاروں میں بم دھماکوں میں تئیس افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے ہیں۔

عراقی پولیس حکام کی اطلاع کے مطابق جمعرات کو دارالحکومت کے شمال میں واقع علاقے صباح البر میں مختلف مارکیٹوں اور بازاروں میں چار بم دھماکے ہوئے ہیں اور ان میں پندرہ افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ایک اور بم دھماکا بغداد کے جنوب میں واقع علاقے الدورہ میں ہوا ہے اور اس میں آٹھ افراد مارے گئے ہیں۔بغداد کے یہ دونوں علاقے سنی اکثریتی ہیں۔

ادھر شمالی شہر موصل میں ایک کار کے ساتھ مقناطیس سے چپکائے گئے بم کے پھٹنے سے ایک پولیس اہلکار ہلاک اور دوشہری زخمی ہوگئے ہیں۔بغداد سے شمال میں واقع ایک اور شہر بعقوبہ میں اسی طرح کے بم دھماکے میں ایک مقامی ٹیلی ویژن کا کارکن مارا گیا۔فوری طور پر کسی گروپ نے ان بم حملوں کی ذمے داری قبول نہیں کی۔

واضح رہے کہ دہشت گرد اور جنگجو گروپ عراق کے شہروں کے مصروف مقامات بازاروں ،مارکیٹوں ،ریستورانوں ،اسٹیڈیمز اور بس اڈوں کو اپنے بم حملوں میں نشانہ بنا رہے ہیں۔اس ماہ اب تک عراق میں تشدد کے واقعات میں سات سو افراد مارے جاچکے ہیں اور سال 2013ء کے آغاز کے بعد سے جنگجوؤں کے بم حملوں اور فائرنگ کے واقعات میں ساڑھے چار ہزار سے زیادہ افراد مارے گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں