.

مصر کا پرامن مقاصد کے لیے"نیوکلیئر" منصوبے کا اعلان

عبوری صدر کی فلسطین ۔ اسرائیل امن مذاکرات کی حمایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے عبوری صدرایڈووکیٹ عدلی منصور نے پرامن مقاصد کے لیے جوہری ٹیکنالوجی کے حصول کے ایک منصوبے کا اعلان کیا ہے، جس کا باضابطہ افتتاح آج شمالی ساحلی علاقے"الضعبہ" میں کیا جائے گا۔ اس کے علاوہ نگران صدر نہرسویز کی ڈویپلمنٹ کے ایک بڑے پروجیکٹ کا بھی افتتاح کریں گے۔

ایک ٹی وی انٹرویومیں عبوری صدرمسٹرعدلی منصور کا کہنا تھا کہ جوہری توانائی کے حصول کی ہماری مساعی سے کسی کو خوف زدہ ہونے کی ضرورت نہیں۔ ہم صرف پرامن مقاصد اور توانائی کی ضروریات پوری کرنے کے لیے ایٹمی پلانٹ لگا رہے ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں عدلی منصور نے کہا کہ 30 جولائی کو سابق صدر محمد مرسی کے خلاف عوامی بغاوت 25 جنوری 2011ء کے عوامی انقلاب کا ایک نیا ایڈیشن تھا۔ اب ہم تمام مصریوں کی مرضی کا دستور مرتب کر رہے ہیں جسے کسی پارٹی یا مخصوص گروپ کا نمائندہ نہیں بلکہ فخر کے ساتھ مصری قوم کا نمائندہ آئین قرار دیا جائے گا۔

انہوں نے عبوری دور میں عوام سے پرامن رہنے اور حکومت کے ساتھ ہرممکن تعاون کی بھی اپیل کی۔ عبوری صدر نے فلسطینی اتھارٹی اوراسرائیل کے درمیان جاری امن مذاکرات کی حمایت کی اور کہا کہ ضرورت پڑی تو قاہرہ مشرق وسطیٰ امن مذاکرات کو آگے بڑھانے میں بھی مدد فراہم کرے گا۔