.

مصر: مختلف حملوں میں 9 سکیورٹی اہلکار ہلاک

قاہرہ شہر میں ایک سیٹلائیٹ سٹیشن پر حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے مختلف حصوں میں ہونے والے حملوں میں سکیورٹی فورسز کو نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں نو فوجی اور پولیس اہلکار ہلاک ہو گئے۔ سیکورٹی حکام نے بتایا ہے کہ شمال مشرقی مصر کے اسماعیلیہ علاقے میں فائرنگ کے واقعے میں ایک فوجی افسر سمیت چھ اہلکار ہلاک ہوگئے۔ یہ تمام فوجی ایک چیک پوائنٹ پر کار میں بیٹھے تھے جب ان پر کچھ مسلح افراد نے حملہ کر دیا۔

جنوبی سیناء کے علاقے الطور میں ایک کار بم حملے میں تین پولیس اہلکار ہلاک جبکہ چالیس افراد زخمی ہو گئے۔ اس حملے میں سکیورٹی فورسز کے زیرِ استعمال ایک عمارت کو شدید نقصان پہنچا۔ قاہرہ کے بیرونی حصے میں ایک سیٹلائٹ سٹیشن پر راکٹوں سے حملہ کیا گیا جس کے نتیجے میں ایک سیٹلائٹ ڈش کو نقصان پہنچا۔

اتوار کو برطرف صدر محمد مرسی کے حامیوں اور سکیورٹی فورسز کے درمیان ہونے والی تازہ ترین جھڑپوں میں درجنوں افراد ہلاک اور کئی سو سے زیادہ زخمی ہوئے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق قاہرہ میں 26 افراد ہلاک ہوئے ہیں جبکہ اخوان المسلمین کے دو سو سے زیادہ افراد کو گرفتار کیا گیا۔

حکومت کی طرف سے 1973 کی عرب اسرائیل جنگ کی یاد میں دن منانے کے موقع پر سابق صدر محمد مرسی کے حامیوں نے ملک کے مختلف شہروں میں جلوس نکالے ہیں۔ عرب اسرائیل جنگ کو چالیس سال ہو چکے ہیں۔ عرب اسرائیل جنگ کی یاد کے دن کے موقع پر سینکڑوں افراد تحریر سکوئر میں جمع ہوئے۔

گزشتہ دو ماہ کے دوران اخوان المسلمین کے ہزاروں اراکین کو حراست میں بھی لے لیا گیا ہے۔ ہجوم کو تشدد اور قتل و غارت گری پر اکسانے کے الزام میں برطرف صدر مرسی سمیت پارٹی کے اہم رہنما اور تحریک کے رہنما محمد بدیع زیر حراست ہیں۔