.

مصر: خودکش حملہ، تین فوجیوں سمیت چار اہلکار ہلاک

حملہ آوروں نے صحرائے سینا میں فوجی پوسٹ اور گاڑیوں کو نشانہ بنایا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے سرحدی علاقے صحرائے سینا میں شدت پسندوں کے حملے میں تین فوجیوں سمیت چار سکیورٹی اہلکار ہلاک ہو گئے ہیں۔

مصری سکیورٹی حکام نے بتایا کہ ملک میں امن و سلامتی کی غیریقینی صورتحال کے پیش نظر شدت پسندوں کے حملوں میں تیزی آ گئی ہے اور تازہ حملے میں انتہا پسندوں نے دھماکا خیز مواد سے بھری گاڑی کو صحرائے سینا کے ایک ساحلی شہر کے قریب چیک پوسٹ پر فوجی گاڑیوں سے ٹکرا دیا ہے۔ جس کے نتیجے میں تین فوجی اور ایک پولیس اہلکار جاں بحق ہوئے ہیں۔

سکیورٹی حکام نے اپنی شناخت مخفی رکھنے کی شرط پر بتایا کہ حملہ آوروں نے چیک پوسٹ کے قریب پہچنے کے بعد وہاں فوجیوں اور پولیس اہلکاروں کی گاڑیوں کا انتظار کیا اور جب انہیں اپنا ہدف قریب دکھائی دیا تو انہوں نے اپنی گاڑی کو سکیورٹی عملے کی گاڑیوں سے ٹکرا دیا جس سے 4 افراد ہلاک جبکہ 5 دیگر افراد زخمی بھی ہو گئے۔

واضح رہے کہ مصر اور اسرائیل کی سرحدی پٹی صحرائے سینا میں گزشتہ برسوں سے ان حملوں میں تیزی ہے۔ خاص طور پر جب سے مصر میں جمہوری صدر محمد مرسی کو اقتدار سے ہٹایا گیا ہے پے در پے واقعات ہو رہے ہیں۔ دوسری جانب مصری فوج اور پولیس نے شمالی صحرائے سینا میں انتہاپسندوں کے خلاف مہم شروع کر رکھی ہے۔