شام میں عید، بشارالاسد عیدالفطر کی طرح اہتمام سے مسجد گئے

شامی باغیوں کی طرف سے صدر کے قافلے کو نشانہ بنانے کی کوشش ناکام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

عرب دنیا کی طرح شام میں بھی منگل کے روز عید الاضحی منائی گئی۔ اس موقع پر شام کے صدر بشارالاسد نے عید الاضحی کی نماز غیر معمولی سکیورٹی کے ماحول میں حسیبہ مسجد میں ادا کی، ان کے ساتھ ان کے بعض قریبی رفقا بھی موجود تھے۔

شام کے سرکاری ٹی وی پر بشارالاسد کی ادائیگی عید کی فوٹیج آن آئیر کی گئی۔ جس میں بشارالاسد کو اپنے حامیوں کو ہاتھ ہلا کر سلام کہتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔

اس موقع پر نماز عید کی امامت بشارالاسد کے حامی امام محمد توفیق البوتی نے کی ۔ ان کے والد شامی حکومت کے سر گرم حامی تھے، جو ماہ مارچ کے دوران مسجد پر ہونے والے ایک بم دھماکے میں مارے گئے تھے۔

شام کے صدر بشار الاسد جو خانہ جنگی کے باعث کم ہی منظر عام پر آتے ہیں اس سے پہلے عیدالفطر کے موقع پر بھی اہتمام سے نماز عید ادا کرنے مسجد آئے تھے۔

ایک این جی او کی اطلاع کے مطابق باغیوں نے شامی صدر کے قافلے کو نشانہ بنانے کی کوشش کی تاہم وہ کامیاب نہ ہوئے۔ شام کی خانہ جنگی میں اب تک ایک لاکھ پندرہ ہزار افراد کے مارے جانے کی اطلاع ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں