عرب دنیا، افریقہ اور یورپ میں مسلمانوں نے عید الاضحی منائی

پاکستان میں کل عید منائی جائے گی، لاکھوں جانور قربان، شیطان کو پتھر مارے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

دنیا کے بیشتر ممالک میں مسلمانوں نے منگل کے روز عید الاضحی منانے کا آغاز مساجد میں نماز عید کی ادائیگی کے ساتھ کیا ہے۔ نماز عید کی ادائیگی کے بعد سنت ابراہیمی ادا کرتے ہوئے قربانی کی۔ آج جن ممالک میں عید الاضحی منائی گئی ہے ان میں سعودی عرب سمیت پوری عرب دینا، افریقی ممالک اور امریکا کے علاوہ یورپ اور ایشیا کے بعض ممالک بھی شامل ہیں، تاہم پاکستان اور بعض دیگر مسلم ممالک میں عید کل بدھ کے روز منائی جائے گی۔

عید الاضحی کے دن قربانی پیش کر کے حج کی تکمیل کی جاتی ہے اور دنیا بھر سے سعودی عرب میں جمع ہونے والے لاکھوں حجاج قربانی کے بعد سر منڈواتے اور طواف زیارت کر کے اپنے گھروں کو لوٹنے کا قصد کرتے ہیں۔

واضح رہے رواں سال حج بیت اللہ کی ادائیگی کیلیے گزشتہ برسوں کے مقابلے کم مسلمانوں کو آنے کی سعادت ملی۔ اس کی وجہ مسجد حرام میں توسیعات کے منصوبہ پر کام جاری ہونا تھا۔ اگلے سال سے انشا ء اللہ پہلے سے بھی زیادہ تعداد میں حجاج یہ سعادت حاصل کر سکیں گے۔

عید الاضحی کی ادائیگی کے موقع پر حرمین الشریفین میں مسلمانوں کے اتحاد، ترقی و خوشحالی اور پوری دنیا کیلیے امن و چین کی دعاوں کے ساتھ اسلام کے فروغ اور سر بلندی کی دعائیں کی گئیں۔ اس موقع پر امت کو درپیش چیلنجوں کے علاوہ ظلم کا شکار بنی نوع انسان کے لیے بھی خصوصی دعائیں کی گئیں۔

اہل اسلام کے اس دوسرے عالمی تہوار کے موقع پر بچوں اور خواتین نے بھی نہ صرف کھلے میدانوں اور مساجد میں نماز عید ادا کی بلکہ غریبوں اور ناداروں کی مدد کر کے اپنے رب کی رضا حاصل کی۔ بحیثیت مجموعی اسلامی تہواروں کا مقصد ہی اللہ کی رضاکی تلاش، اجتماعی اتحاد اور کمزوروں کی مدد ہے۔

عید اور قربانی کے حوالے سے مسلمانوں کی سب سے بڑی تعداد منی میں جمع تھی۔ ایک اندازے کے مطابق منی میں پندرہ لاکھ حجاج جمع تھے۔ جنہوں نے قربانی کرنے اور سرمنڈوانے سے پہلے شیطان کو کنکریاں ماریں۔

عید الاضحی کے اس مبارک موقع پر مسلم ممالک کے سربراہان نے خصوصی پیغامات جاری کیے تاکہ باہمی اتحاد کو فروغ دیا جا سکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں