سکرین کی مدد سے بغیر پہنے ملبوسات 'ٹرائی' کا منفرد تجربہ

جدید ٹکنالوجی سے صارفین اور تاجر دونوں مستفید ہوں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

جدید ٹکنالوجی کا استعمال دفاتر میں عام سی بات ہو گئی ہے. حال ہی میں ملبوسات کی نمائش میں بھی اس سے بھر پور مدد لی جا رہی ہے۔ حال ہی میں متحدہ عرب امارات کے کاروباری مرکز دبئی میں بڑی اسکرینوں کی مدد سے جائکٹس اور ملبوسات کی نمائش کے ذریعے گاہکوں کی توجہ حاصل کرنے کا منفرد تجربہ کیا گیا۔

ملبوسات کو بغیر پہننے چیک کرنے کا عملی مظاہرہ "شارپ" کمپنی نے GITEX نمائش میں کیا، جس میں مختلف شاپنگ ہال میں لگی کمپیوٹر اسکرینوں اور آئینوں کی مدد سے گاہکوں کو ان کے من پسند ملبوسات کے انتخاب کا موقع فراہم کیا گیا۔ "شارپ" کا کہنا ہے کہ الیکٹرانک نمائش کے ذریعے گاہکوں کو اپنی پسند کے ملبوسات کی خریداری میں سہولت ہو گی اور انہیں من پسند لباس ٹرائی کرنے کی مشکل سے بھی نجات مل جائے گی۔

العربیہ ٹی وی کی نامہ نگار مایا جریدینی نے اس منفرد نمائش کا احوال بیان کرتے ہوئے بتایا کہ نمائش میں کمپیوٹر اسکرینوں کو بڑے آئینوں میں تبدیل کیا گیا ہے تاکہ گاہکوں کو کم وقت میں زیادہ سے زیادہ ملبوسات تک رسائی فراہم کی جا سکے۔

ملبوسات کی الیکٹرانک نمائش کا ایک فائدہ یہ بھی ہوگا کہ کمپنی کو ملبوسات کے سائز کی جانچ کے لیے الگ سے ٹرائی روم مختص کرنے کی ضرورت نہیں پڑے گی اور اپنے سامان کو بار بار ترتیب دینے کی زحمت سے بھی چھٹکارا مل جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں