سلامتی کونسل رکنیت: جان کیری کی سعودی وزیر خارجہ سے ملاقات

سعودی عرب رکن بن کر مشرق وسطی میں بہتر کردار ادا کر سکے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکا نے سعودی عرب کو سلامتی کونسل کی عارضی رکنیت قبول کرنے پر آمادہ کرنے کی کوششیں تیز کر دی ہیں۔ اس سلسلے میں امریکی وزیر خارجہ پاکستان کے وزیراعظم میاں نواز شریف ک ےاہم دورہ امریکا کے باوجود سعودی ہم منصب سعود الفیصل سے ملنے کیلے پیرس پہنچ گئے۔

جان کیری نے پیرس میں شہزادہ سعودالفیصل سے ان کی نجی رہائشگاہ پر ملاقات کی اور انہیں سلامتی کونسل کی رکنیت سنبھالنے پر قائل کرنے کی کوشش کی۔ ان کی یہ ملاقات دوگھنٹوں پر محیط تھی۔

امریکی سفارتی ذرائع کے مطابق اس موقع پر جان کیری کا کہنا تھا '' سعودی فیصلے کو امریکا قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے، لیکن سلامتی کونسل کی رکینت کے بعد سعودی قیادت ان معاملات کو خود دیکھ سکے گی۔''

ان ذرائع کے مطابق جان کیری اور سعودالفیصل کے درمیان شام کے تنازعے پر بھی تفصیل کیساتھ بات ہوئی ہے جبکہ امریکا اور ایران کے درمیان نئی مفاہمت پر بھی سعودی تحفظات سنے گئے۔ امریکی اور سعودی وزرائے خارجہ نے پیرس میں ہونے والی اس اہم ملاقات میں دوطرفہ ایشوز کا تفصیلی جائزہ لیا ہے۔

واضح رہے جمعرات کے روز سعودی عرب کو پہلی مرتبہ سلامتی کونسل کا رکن منتخب کیا گیا لیکن اگلے ہی روز سعودی عرب نے اس کی رکنیت کو احتجاجا قبول کرنے سے انکار کر دیا تھا کیونکہ سلامتی کونسل مشرق وسطی کے معاملات طے کرنے میں ناکام رہی ہے۔ سعودی عرب کے اس فیصلے کی عرب ممالک نے بھی تائید کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں