معمر قذافی نے ایم آئی 6 کی مدد سے مخالف وکیل کو سزا دی

اہلیہ سمیت قید اور تشدد کا نشانہ بننے والا وکیل ثبوتوں کے ساتھ عدالت میں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

لیبیا پر چالیس برس تک حکمرانی کرنے والے معمر قذافی کے مخالف لیبیائی وکیل نے برطانوی حساس ادارے ایم آئی 6 اور معمرقذافی کے درمیان تعاون کے انکشافات کر کے عدالت سے حقائق کے بارے میں فیصلہ دینے کی درخواست کی ہے۔

لیبیائی وکیل عبدالحکیم بہلاج کے مطابق ایم آئی 6 نے اسے اور اس کی اہلیہ کو معمر قذافی حکومت کے حوالے کیا، جس کے بعد انہیں اور ان کی اہلیہ کو لیبیا قید اور غیر معمولی تشدد کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

عبدالحکیم بہلاج نے اس سلسلے میں عدالت کو ایسے دستاویزی شواہد بھی پیش کیے ہیں جن سے برطانوی حساس ادارے اور کرنل معمر قذافی کے روابط ثابت ہو سکتے ہیں۔

لیبیا کا یہ انصاف مانگنے والا وکیل ان دنوں لیبیا کی قدامت پسند جماعت اسلامسٹ الوطن پارٹی کا رہنما ہے۔ اس نے برطانیہ کے سابق وزیر خارجہ جیک سٹرا اور ایم آئی 6 کے سربراہ مارک ایلن کو فریق بنایا ہے۔

عبدالحکیم بہلاج کا کہنا تھا'' مجھے خوشی ہے کہ ایسا وقت آیا ہے کہ قانون اپنا راستہ بنا رہا ہے اور ہم اس کے نتائج دیکھنے والے ہیں۔''

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں