فلسطینی قوم کے مطالبات کی بھرپور حمایت جاری رکھیں گے: بحرین

عوام کے حقوق کے لیے اصلاحات کا عمل جاری رکھنے کا عزم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

خلیجی ریاست بحرین کے فرمانروا حمد آل خلیفہ نے کہا ہے کہ ان کا ملک فلسطینیوں کے جائز اور آئینی مطالبات کی ہر سطح پرحمایت جاری رکھے گا۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ فلسطین کا حل ہماری اولین ترجیحات میں شامل ہے۔ ہمیں فلسطینیوں کی مشکلات کا بھرپور احساس اور اندازہ ہے، یہی وجہ ہےکہ ہم فلسطینی عوام کے جائز اور تمام آئینی مطالبات کی ہر فورم پر حمایت کے عزم کا اعادہ کرتے ہیں۔

العربیہ ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق بحرینی فرمانروا نے ان خیالات کا اظہار پارلیمنٹ کے چوتھے سیشن کے افتتاحی اجلاس سے خطاب کے دوران کیا۔ شاہ حمد آل خلیفہ کا کہنا تھا کہ ہم ایک ایسی آزاد اور مکمل خود مختار فلسطینی ریاست کی حمایت جاری رکھیں گے جس کا دارالحکومت بیت المقدس ہو۔ ہمارا اور فلسطینی قوم کا یہ مطالبہ بین الاقوامی قراردادوں کے مطابق عین اصولی اور حق بجانب ہے۔ ہم مسئلہ فلسطین کا ایک ایسا منصفانہ، دائمی اور ہمہ گیر حل چاہتے ہیں جو برادر فلسطینی عوام کے تمام طبقات کے لیے یکساں طور پر قابل قبول ہو۔

بحرینی فرمانروا نے ملک میں اصلاحات کا عمل جاری رکھنے کی ضرورت پر بھی زور دیا اور کہا کہ جب سے انہوں نے زمام حکومت سنھبالی ہے وہ عوام کے دستوری حقوق کو یقینی بنانے اور انتظامی امور میں تمام طبقات کو شامل کرنے کے اصولوں پرکار بند رہے ہیں۔ اس سلسلے میں آئندہ بھی مزید اقدامات کیے جائیں گے۔

انہوں نے اپنے عوام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ "میں اپنے عوام سے صرف یہ کہوں گا کہ وہ اپنے حقوق کے لیے جو کچھ کریں وہ کھلے عام، جمہوری اور آئینی دائرے میں رہ کر کریں کیونکہ خفیہ سرگرمیاں کسی کے مفاد میں نہیں ہیں۔ حکومت نے ملک میں تنظیم سازی پر پابندی عائد نہیں کی لیکن ایسی کوئی بھی سرگرمی آئینی دائرے کے اندر ہی قبول کی جا سکتی ہے"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں