.

شام کی مشرقی سرحد پر کرد جنگجووں کا کنٹرول

کردوں نے القاعدہ سےعلاقہ خالی کرا کے سرحدی کنٹرول سنھال لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کرد جنگجووں نے عراق کے ساتھ لگنے والی شام کی مشرقی سرحد کو ہفتے کی صبح کنٹرول میں میں لیکر بند کر دیا ہے۔ کرد باغیوں کو یہ کامیابی القاعدہ سے منسلک گروپ کے ساتھ تین دن کی لڑائی کے بعد ملی ہے۔

ہفتے کو صبح سویرے ہی کرد باغیوں نے یاروبیہ سرحد کا کنٹرول سنبھال لیا۔ تاہم اس سے پہلے دو طرفہ جھڑپیں ہوئیں جن میں کرد باغی حاوی ہوگئے۔

واضح رہے اس علاقے میں القاعدہ کا انصرہ فرنٹ اور بعض دیگر گروپ مل کر کردوں کے ساتھ لڑ رہے تھے۔ تاہم ہفتے کی صبح پانسہ کردوں کے حق میں پلٹ گیا۔

غیر جانبدار ذرائع نے فی الحال کردوں اس سرحدی علاقے میں حاوی ہونے کی تصدیق نہیں کی، تاہم شام میں انسانی حقوق کیلیے کام کرنے والی ''آبزرویٹری'' نے کردوں کی طرف سے سرحدی علاقے پر کنٹرول کر لینے کی تصدیق کی ہے۔

کرد نسل پرستوں کا شام میں کردار بڑا پیچیدہ اور مبہم سمجھا جاتا ہے۔ خصوصا جب سے بشار الاسد نے جمہوریت پسندوں کیخلاف جنگی کارروائیاں شروع کی ہیں کرد وں نے واضح طور پر اپنا وزن کسی پلڑے میں نہیں ڈالا ہے۔