شام: باغیوں کے حملے میں حزب اللہ کے 15 جنگجو ہلاک

کیمیائی حملوں سے متاثرہ الغوطہ کا محاذ جنگ پھر گرم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شام کے دارالحکومت دمشق کے نواحی علاقے الغوطہ میں صدر بشارالاسد کی حامی ملیشیا اور باغیوں کے درمیان گھمسان کی لڑائی کی اطلاعات ہیں۔ دمشق سے آنے والی خبروں کے مطابق الغوطہ میں باغیوں نے حملہ کرکے لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے پندرہ جنگجو قتل کردیے ہیں، جبکہ سات زخمی ہوئے ہیں جنہیں لبنان منتقل کیا گیا ہے۔

شام میں انقلابیوں کی رابطہ کمیٹیوں کی جانب سے جاری اطلاعات کے مطابق گذشتہ دو برس کے دوران حزب اللہ کے شامی جنگ میں کودنے کے بعد لبنان کے سیکڑوں افراد باغیوں کے ہاتھوں ہلاک ہوچکے ہیں، ان میں بڑی تعداد شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے جنگجوؤں کی ہے جو شام میں صدر بشارالاسد کی حمایت میں برسرجنگ ہیں۔

العربیہ ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق حزب اللہ لبنان میں اپنے ہم خیال نوجوانوں کو مسلک کی آڑ میں شامی جنگ میں جھونک رہی ہے۔ حزب اللہ کی جانب سے کم عمر نوجوانوں کو یہ کہہ کربھرتی کیا جاتا ہے تنظیم شام میں مزارات اور مقدس مقامات کی حفاظت کے لیے کوشاں ہے۔ مقدس مقامات اور مزارات کی حفاظت کا جھانسہ دے کرشام لائے جانے والے سیکڑوں کم عمر لڑکے باغیوں کے ہاتھوں جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔

مشرقی الغوطہ میں تازہ کارروائی میں مرنے والوں میں کئی کم عمر لڑکے بتائے جاتے ہیں۔ خیال رہے کہ یہ وہی شہرہے جس میں ستمبرکے اوائل میں مبینہ کیمیائی حملے کے نتیجے میں سیکڑوں افراد جاں بحق اور زخمی ہوگئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں