.

شام:عالمی انسپکٹرکیمیائی ہتھیاروں کی دوجگہوں کے معائنے میں ناکام

دونوں جگہوں تک محفوظ رسائی یقینی بنانے کے لیے کوششیں جاری رکھنے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عالمی معائنہ کار شام میں سکیورٹی کی خراب صورت حال کے پیش نظر کیمیائی ہتھیاروں کی دو باقی جگہوں کے معائنے میں ناکام رہے ہیں۔

ہیگ میں قائم کیمیائی ہتھیاروں کے امتناع کی تنظیم (او پی سی ڈبلیو) نے سوموار کو جاری کردہ ایک بیان میں بتایا ہے کہ ''انسپکٹروں نے اتوار تک شام کی کیمیائی ہتھیاروں کی تئیس میں سے اکیس جگہوں کا معائنہ کرلیا تھا لیکن وہ سکیورٹی وجوہات کی بنا پر باقی دو جگہوں کا معائنہ نہیں کرسکے ہیں''۔

او پی سی ڈبلیو نے مزید کہا ہے کہ تنظیم اور اقوام متحدہ کا شام کے کیمیائی ہتھیاروں کی 2014ء کے وسط تک تلفی کے لیے قائم مشترکہ مشن ان دونوں جگہوں تک محفوظ رسائی کو یقینی بنانے کے لیے اپنی کوششیں جاری رکھے گا۔تاہم مشن نے یہ واضح نہیں کیا کہ ان دونوں جگہوں تک عدم رسائی اور سکیورٹی مسائل کا کون ذمے دار ہے۔

شام نے 2014ء کے وسط میں اپنے تمام کیمیائی ہتھیاروں کی تلفی کے لیے وضع کردہ نظام الاوقات کے مطابق ہیگ میں کیمیائی ہتھیاروں کے امتناع کی تنظیم کو اپنے کیمیائی ہتھیاروں کی تلفی کے لیے منصوبہ مقررہ تاریخ 27 اکتوبر (اتوار) سے تین روز قبل ہی 24 اکتوبر کو جمع کرادیا تھا۔اس اعلامیے میں زہریلی گیس اوراعصاب شکن ایجنٹ کے ذخیرے اور ان کی تمام جگہوں کی تلفی سے متعلق مکمل تفصیل شامل تھی۔

شام قبل ازیں اپنے کیمیائی ہتھیاروں سے متعلق ابتدائی تفصیل سے او پی سی ڈبلیو کو آگاہ کرچکا ہے اوراس عالمی ادارے کے معائنہ کار شام کی اعلان کردہ تیئس میں سے اکیس جگہوں کا گذشتہ ہفتوں کے دوران معائنہ کرچکے ہیں۔واضح رہے کہ عالمی معائنہ کار بھی مذکورہ مقررہ تاریخ تک شامی اعلامیے میں بیان کردہ کیمیائی ہتھیاروں کی جگہوں کے معائنے کا کام مکمل کرنے کے پابند تھے۔