مصری پولیس چیک پوسٹ پر حملہ، تین پولیس اہکار ہلاک

واقعہ وادی نیل کے علاقے منصورہ میں پیش آیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصر میں جاری تشدد کے دوران القاعدہ سے مبینہ منسلک گروپ نے تین پولیس اہلکاروں کو ہلاک کر دیا ہے۔ منتخب مصری صدر محمد مرسی کی جولائی میں ہونے والی برطرفی کے بعد ایسے واقعات میں تیزی کا رجحان ہے۔

پولیس اہلکارں کی ہلاکت کی کارروائِی وادی نیل کے علاقے منصورہ میں پیش آئی، جہاں چہروں پر نقاب تین اوڑھے حملہ آوروں نے ایک پولیس چیک پوسٹ کو نشانہ بنایا ۔اس سے پہلے اس نوعیت کے زیادہ تر واقعات سینائی کے علاقے میں پیش آتے رہے ہیں۔

سکیورٹی ذرائع کے مطابق پولیس اہلکار اپنے معمول کے مطابق پولیس چیک پوسٹ پر موجود تھے کہ علی الصباح ایک گاڑی پر سوار تین مسلح افراد جبکہ ایک مسلح شخص موٹر سائیکل پر سوار ہو کر وہاں پہنچا۔ مسلح افراد نے آتے ہی فائرنگ شروع کر دی اور اس وقت تک فائرنگ جاری رکھی جبکہ تمام پولیس اہلکار ہلاک نہیِں ہو گئے۔

سکیورٹی ذرائع کے مطابق اس نوعیت کا یہ دوسرا واقعہ ہے۔ مقامی ذرائع کے مطابق موقع سے استعمال شدہ گولیوں کے 60 خول ملے ہیں، تاہم سکیورٹی اہلکاروں نے کسی خاص گروپ پر اس واقعے کی ذمہ داری عاید نہیں کی ہے۔

دوسری جانب وادی نیل کے ہی ایک اور علاقے قلیوبیہ میں پراسیکیوٹر نے 16 افراد کی گرفتاری کا حکم دیا ہے واضح رہے ان افراد پر وزیر داخلہ محمد ابراہیم پر حملہ کرنے کا الزام ہے۔

سینائی سے تعلق رکھنے والا ایک القاعدہ گروپ ایک ویڈیو کے ذریعے پہلے ہی وزیر داخلہ پر حملے کی ذمہ داری قبول کر چکا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں