شام: باغیوں نے دمشق میں سرکاری فوج کا کیمپ دھماکے سے اڑا دیا

دمشق میں بری فوج کوشکست، فضائی حملوں میں تیزی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

شام میں حکومت مخالف باغیوں نے دارالحکومت دمشق کے نواحی علاقے میں ابو العباس بریگیڈ کے ایک کیمپ کو دھماکے سے اڑا دیا ہے، تاہم کارروائی میں ہونے والے جانی نقصان کی تفصیلات سامنے نہیں آ سکی ہیں۔

ادھر باغیوں کے زیر اثر شہر حمص میں بشار الاسد کی وفادار فوج نے بڑے پیمانے پر فضائی حملے کیے ہیں۔ حملوں میں الزارہ کالونی سب سے زیادہ متاثر ہوئی ہے۔ متاثرہ شہری گھروں کے اندر محصور ہو کر رہ گئے ہیں۔ انہوں نے انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں اور بین الاقوامی برادری سے مدد کی اپیل کی ہے۔

شامی خبر رساں ایجنسی"سانا" کی رپورٹ کے مطابق دمشق میں باغیوں کے خلاف کارروائی میں بشار الاسد کی بری افواج کو شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے جس کے بعد فضائی حملے تیز کردیے گئے ہیں۔دمشق کی فضاء جنگی جہازوں کی پروازوں اور دھماکوں سے گونج رہی ہے۔

دمشق کے نواحی علاقوں داریا، عدرا اور السبینہ میں بھی باغیوں اور سرکاری فوج کے درمیان خون ریز جھڑپوں کی اطلاعات ہیں لیکن سیدہ الزینب میں المشتل اور حجیرہ راونڈ اباوٹ کے مقامات پر باغیوں اور اسد نواز ملیشیا کے درمیان گھمسان کی لڑائی کی خبریں آرہی ہیں۔ ان کالونیوں نےابو الفضل عباس بریگیڈ کے فوجی اور حزب اللہ کے جنگجو مل کرباغیوں پرحملے کر رہے ہیں۔

حلب کے محاذ جنگ سے ملنےوالی اطلاعات کے مطابق جیش الحر نے اشرفیہ اور المیدان کالونی اور ھنانو چھاؤنی میں سرکاری فوج کی تنصیبات پر حملے کیے ہیں تاہم بشارالاسد کی حامی ملیشیا اورفوج نے ان کی پیش قدمی روک رکھی ہے۔ اسی شہرمیں المطاحن کے مقام پر النیرب فوجی اڈے پربھی باغیوں نے حملہ کیا ہے مگر فی الحال فوجی اڈے کا کنٹرول سرکاری فوج کے ہاتھ میں ہے۔ فوجی اڈے کےآس پاس کے پہاڑی علاقوں اور قصبوں میں جھڑپیں جاری ہیں۔

دیر الزور شہر میں الرشیدیہ اور الرصافہ کالونیوں میں کالونیوں میں باغیوں نے سرکاری فوج کو مشکل میں ڈال رکھا ہے۔ باغیوں نے دیر الزور کے ملٹری اڈے پر متمرکز سرکاری فوج کے میزائل لانچک پیڈ کو ماٹر گولوں سے نشانہ بنا کر اسے تباہ کر دیا ہے۔

حمص میں سرکاری فوج نے باغیوں کے زیر کنٹرول قلعہ الحصن کا محاصرہ کر رکھا ہے اور دونوں جانب سے ایک دوسرے پر توپخانے سے گولہ باری جاری ہے۔

باغیوں کی ترجمان ویب سائیٹ "سیرین نیٹ" کے مطابق جیش الحرنے درعا شہر میں الکازیہ فوجی اڈے اور اس کے آس پاس متمرکز فوجیوں پر حملے کیے ہیں۔ شہر میں النشیہ کالونی اور حرفوش چیک پوسٹ کے قریب خون ریز لڑائی کی اطلاعات ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں