.

لیبیا: تین دنوں میں فوجی انٹیلی جنس کے دو افسر ہلاک

انٹیلی جنس افسر ابو سیف المبارک کی گاڑی کے ساتھ بم باندھا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا کی انٹیلیجنس کا ایک افسر کو کار بم دھماکے میں یلاک کر دیا گیا ہے۔ تین دنوں میں انٹیلی جنس ادارے کے افسروں کو نشانہ بنانے کی یہ دوسری کامیاب کارروائی ہے۔ اس سے قبل اسی طرح کی ایک کارروائی کے دوران ایک انٹیلی جنس افسر کو اسی راستے پر مارا گیا تھا۔

سکیورٹی ادارے کے ترجمان کے مطابق انٹیلی جنس افسر ابو سیف المبارک کو کار بم دھماکے میں زخمی ہونے کے بعد ہسپتال لایا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہو گیا۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ فوجی انٹیلی جنس کا 44 سالہ افسر دھماکے میں غیرمعمولی طور پر زخمی ہو گیا تھا کیونکہ دھماکہ کرنے والی ڈیوائیس اس کی گاڑی کے ساتھ لگائی گئی تھی۔ یہ واقعہ البرکہ ضلع میں پیش آیا ہے۔

واضح رہے فوجی انٹیلی جنس کا ایک اور افسر سلیمان الفیسی بھی صرف تین دن پہلے اسی طرح کی ایک کارروائِی کا نشانہ بنا تھا۔ سلیمان الفیسی کی گاڑی کے نیچے بم باندھا گیا تھا۔ اس افسر کے بیوی بچے بھی زخمی ہو گئے تھے۔

بدھ ہی کے روز فوج کے دوسرے افسر کرنل عیصام الہو یدی کو ایک قاتلانہ حملے کے دوران زخمی کر دیا گیا ہے، تاہم ڈاکٹروں نے ان کی زندگی خطرے سے باہر بتائی ہے۔