کویت نے شان صحابہ کا گستاخ سعودی ملک بدر کر دیا

"کسی کو مذہبی منافرت پھیلانے کی اجازت نہیں دیں گے"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

خلیجی ریاست کویت نے سعودی عرب کے ایک شہری کو صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم کی شان میں گستاخی کی پاداش میں ملک بدر کر دیا ہے۔ کویتی وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ سعودی شہری ملک میں مذہبی اور مسلکی منافرت کا مرتکب ہوتے ہوئے صحابہ جیسی عظیم ہستیوں کی شان میں گستاخی کا بھی سزا وار تھا۔ حکومت ملک میں کسی شخص کو مذہبی منافرت اور انتشار پھیلانے کی اجازت نہیں دے گی۔

کویت کی خبر رساں ایجنسی "کونا" کے مطابق وزارت داخلہ کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ سعودی شہری حسین الفہید نے صحابہ کبار کی شان میں گستاخی کا ارتکاب کیا، جس کے بعد اسے گذشتہ روز ملک سے نکال دیا گیا ہے۔

وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ سعودی شہری کی ملک بدری کا فیصلہ اس پر عائد الزامات کی مکمل چھان بین کے بعد کیا گیا ہے۔ حسین الفہید نے حال ہی میں ایک مذہبی مجلس سے خطاب کرتے ہوئے صحابہ کرام کے بارے میں ایسے الفاظ استعمال کیے تھے جو ان کی شان میں گستاخی کے زمرے میں آتے تھے۔ الفہید کی یہ متنازعہ تقریر اخبارات اور سوشل میڈیا میں بھی آ چکی ہے۔ نیز ملزم نے خود بھی صحابہ کے بارے میں نازیبا الفاظ کے استعمال کا اعتراف کیا جس کے بعد اسے ملک چھوڑنے کا حکم دے دیا گیا۔

کویت کا کہنا ہے کہ حسین الفہید کی ملک بدری سے ملک میں مذہبی فرقہ واریت کو ختم کرنے اور معاشرے میں انتشار ختم کرنے میں مدد ملے گی کیونکہ افراد معاشرے میں بگاڑ کا باعث بن رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں