شامی اپوزیشن کا جنیوا ٹو بارے فیصلہ قابل تعریف ہے: امریکا

شامی کردوں کا قومی اتحاد میں شامل ہونا اچھی بات ہے: جین پاسکی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکا نے شامی اپوزیشن کی طرف سے جنیوا ٹو امن کانفرنس میں شرکت کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس فیصلے سے قیام امن کے اہداف آسان ہوں گے۔

امریکی دفتر خارجہ کی ترجمان جین پاسکی نے اس حوالے سے اپنے خیر مقدمی بیان میں کہا ہے کہ '' یہ شام میں امن کی خاطر منعقد کی جانے والی جنیوا کانفرنس کے حوالے سے ایک اہم قدم ہے، کہ باہمی مرضی سے مذاکراتی وفود کی تشکیل کی گئی تاکہ ایک عبوری حکومت پورے اختیارات کے ساتھ قائم ہو سکے۔

امریکی ترجمان نے اس موقع پر شام کے کرد قومی اتحاد کے شامی اپوزیشن اتحاد میں شامل ہونے کی بھی تحسین اور خیر مقدم کیا۔

واضح رہے شامی اپوزیشن اتحاد نے دو روز قبل استنبول میں مشروط بنیادوں پر یہ فیصلہ کیا تھا کہ وہ جنیوا ٹو میں شرکت کرے گا۔

شام اپوزیشن اتحاد کی جانب سے پیش کردہ شرائط میں شامل ہے کہ بشار الاسد کی اقتدار سے علیحدگی ہو اور عبوری حکومت میں بشار الاسد اور عوام کا خون کرنے والے اس کے ساتھیوں کا کوئی کردار نہ ہو۔

امریکی ترجمان نے شامی قائدین نے زیر محاصرہ شامی متاثرین جنگ کیلیے ریلیف سے متعلق کارکنوں اور سامان کی محفوظ رسائی کی شرط پر کہا خواتین اور نوعمر قیدیوں کی رہائی کے حوالے سے بھی جنیوا امن کانفرنس میں بات ہو گی۔

جین پاسکی کا کہنا تھا کہ ''امریکا اپنے پارٹنرز سمیت روس کے ساتھ بھی قریبی رابطے سے پر انسانی بنیادوں پر چیزوں کو آگے بڑھائے.

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں