.

16 سالہ فلسطینی لڑکے کے چاقو سے حملے میں اسرائیلی فوجی ہلاک

چچا کی اسرائیلی جیل میں قید سے نالاں فلسطینی کا بس میں سوارفوجی پر چاقو سے وار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مغربی کنارے سے تعلق رکھنے والے ایک سولہ سالہ فلسطینی لڑکے نے بس پر سفر کے دوران ایک اسرائیلی فوجی کو چاقوکے وار کرکے ہلاک کردیا ہے۔

اسرائیلی پولیس کا کہنا ہے کہ اس لڑکے کو اپنے ایک عزیز کو جیل میں ڈالنے کا رنج تھا۔اسرائیلی فوجی کے قتل کا یہ واقعہ اسرائیل کے شمالی قصبے عفولہ میں پیش آیا ہے۔

اسرائیل کی شمالی پولیس کمان کے سربراہ رونی عطیہ کا کہنا ہے کہ حملہ آور لڑکے کا تعلق غرب اردن کے کنارے کے شہر جنین سے ہے اور اسے حراست میں لے لیا گیا ہے۔

پولیس کمانڈر کے بہ قول اس فلسطینی لڑکے نے بتایا ہے کہ اس کے چچا اسرائیلی جیل میں قید ہیں اور اسی سبب اس نے حملہ کرنے کا فیصلہ کیا۔اسرائیلی پولیس کے ترجمان میکی روزنفیلڈ نے کہا ہے کہ چاقو کے وار سے اٹھارہ سالہ فوجی شدید زخمی ہوگیا تھا،اسے فوراً اسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ دم توڑ گیا ہے۔

اسرائیلی فوجی کے قتل کا واقعہ جہاں پیش آیا ہے ،یہ علاقہ مقبوضہ مغربی کنارے کے نزدیک واقع ہے جہاں اسرائیل اور فلسطین کے درمیان امن مذاکرات کی بحالی کے بعد سے تشدد کے واقعات میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ اسرائیلی فوجیوں نے جولائی کے بعد سے مختلف کارروائیوں میں دس فلسطینیوں کو شہید کردیا ہے جبکہ جوابی حملوں میں تین اسرائیلی مارے گئے ہیں۔