.

ایرانی جوہری پروگرام پر معاہدہ، ورنہ جنگ: حسن نصراللہ

جنگ سے زیادہ پریشانی دوسروں کو ہو گی: حزب اللہ چیف کا خطاب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کے اہم اتحادی اور لبنانی حزب اللہ کے سربراہ حسن نصراللہ نے خبر دار کیا ہے کہ ایران کے جوہری پروگرام پر معاہدہ کرنے میں ناکامی ہوئی تو خطے میں جنگ چھڑ سکتی ہے۔ حسن نصراللہ جن کی عوامی سطح پر رونمائی کم ہی ہوتی ہے ایک مذہبی جلسے جنوبی بیروت میں خطاب کر رہے تھے۔

حسن نصراللہ نے کہا '' مغربی ممالک کو ایرانی جوہری تنازعے کے حوالے سے ایک معاہدے پر پہنچنا ہو گا بصورت دیگر حالات جنگ کی طرح بڑھ جائیں گے۔'' واضح رہے حزب اللہ 2006 میں اسرائیل کے ساتھ 34 دن تک حالت جنگ میں رہ چکی ہے۔

حزب اللہ کے سربراہ نے کہا '' اگر جنگ شروع ہوئی تو یہ سب کے لیے پریشانی کی بات ہو گی، لیکن ہمارے مقابلے میں دوسروں کو زیادہ پریشانی ہو گی۔''

حزب اللہ کے سربراہ نے مزید کہا '' ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان معاہدے سے خطے میں اور بین الا قوامی سطح پر ہماری پوزیشن بہتر ہو گی۔''

ان دنوں عالمی طاقتیں ایران کے ساتھ جنیوا میں میراتھان طرز پے مذاکارت شروع کیے ہوئے ہیں جبکہ اسرائیل ایران کے ساتھ کسی بھی معاہدے کا سخت مخالف ہے۔

حزب اللہ کے سربراہ نے ایک مرتبہ پھر شام کے صدر بشارالاسد کی مکمل حمایت کا اعداہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ جو ملک بشار الاسد کے اقتدار کا خاتمہ چاہتے ہیں انہین ناکامی ہو گی۔

2 اگست کے بعد پہلی مرتبہ منظر عام پر آنے والی ملیشیا سربراہ نے شیعہ سنی جھگڑوں کے حوالے سے کہا ان جھگڑوں کو دیکھ کر اسرائیل خوش ہوتا ہے۔