.

امریکا لیبیا کے 7000 سکیورٹی اہلکاروں کو تربیت دے گا

ایسے افراد کے بھی تربیت پانے کا خدشہ، جنکا ریکارڈ درست نہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا لیبیا کے سات ہزار سکیورٹی اہلکاروں کو تربیت دے گا تاکہ دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کیلیے لیبیا کو مضبوط کیا جا سکے۔ امریکی فورسز خصوصی آپریشنزفورس کو بھی تربیتی خدمات پیش کریں گی۔ یہ بات امریکی فوجی حکام نے بتائی ہے۔

امریکی فوج کے خصوصی آپریشنز کمانڈ کے سربراہ ایڈمرل ولیم میکراون کے مطابق لیبیا کے سکیورٹی اہلکاروں کو تربیت دیتے ہوئے دہشت گردی سے نمٹنے پر توجہ مرکوز رکھی جائے گی۔

امریکی فوجی ذمہ دار نے کیلفورنیا میں ایک امریکی دفاع سے متعلق سیمینار میں گفتگو کرتے ہوئے کہا '' لیبیا کی فوج کو روائتی فوجی تربیت دی جارہی ہے جبکہ خصوصی آپریشنز کی تربیت کا اہتمام ایک اضافی اور اعزازی خدمت ہو گی۔''

واضح رہے طرابلس میں روز بروز بد امنی بڑھتی جا رہی ہے اور صرف جمعہ کے دن میں طرابلس کی گلیوں میں 40 شہری مارے گئے ہیں۔ جبکہ لیبیا کے انٹیلی جنس آفیسر بھی ان دنوں خصوصی ہدف بنے ہوئے ہیں۔

امریکی فوجی ذمہ دار نے عسکریت پسندوں کی لیبیا میں مختلف وزارتوں کی حفاظت کیلیے خدمات حاصل کیے جانے کا بھی ذکر کیا اور کہا اس کے باوجود متعلقہ عسکریت پسند اپنے کمانڈروں کے ہی وفادار رہتے ہیں۔

امریکی فوجی ذمہ دار کا کہنا تھا'' اس ٹریننگ کے دوران یہ خطرہ بھی موجود ہے کہ لیبیا کے ایسے لوگ تربیت بھی پا لیںگے جن کا پچھلا ریکارڈ زیادہ اچھا نہیں ہے۔''