.

یو اے ای ایک کھرب ڈالر مالیت کے 200 مسافر جہاز خریدے گا

ائر شو میں خلیجی فضائی کمپنیوں کو نئے طیارے خریدنے کی ترغیب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات نے دبئی میں ہونے والے تیرہویں عالمی ایئر شو سے فائدہ اٹھاتے ہوئے ایک کھرب امریکی ڈالر سے زائد مالیت کے کم سے کم دو سو نئے ہوائی جہازوں کی خریداری کا عزم کیا ہے۔

یو اے ای کی جانب سے ہوائی جہازوں کی خریداری کے تازہ معاہدے دبئی میں جاری تیرہویں عالمی ایئر شو کے موقع پرطے پانے جا رہے ہیں۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق دبئی میں جاری "ائرشو" کی افتتاحی تقریب میں متحدہ عرب امارات کے نائب صدر الشیخ محمد بن راشد آل مکتوم نے شرکت کی۔

خیال رہے کہ دبئی میں شروع ہونے والی یہ خطے میں ہوائی جہازوں کی تاریخ کی سب سے بڑی نمائش سمجھی جا رہی ہے جس میں یورپ اور امریکا سمیت دنیا بھر کی ہوائی جہاز تیار کرنے والی کمپنیاں حصہ لے رہے ہی ہیں۔ دبئی میں ہونے کی بدولت یہ ائیر شو خلیجی ملکوں کی فضائی سروس فراہم کرنے والی کمپنیوں کے لیے بھی نئے جہازوں کی خریداری کے حوالے سے ایک سنہری موقع سمجھا جا رہا ہے۔

امریکی "بوئنگ X777" اور یورپی کمپنی کے"ایئر بس" ہوائی جہاز خلیجی کمپنیوں کی توجہ کا زیادہ مرکز ہیں۔ ان دونوں کمپنیوں کے طیاروں کی دبئی ایئرشو میں شمولیت سے نمائش کو بھی چار چاند لگ گئے ہیں۔

متحدہ عرب امارات کی جانب سے فضائی نمائش کے دوروان ڈیڑھ سو سے دو سو ارب ڈاالرمالیت کے کم سے کم دو سو نئے مسافر طیاروں کی خریداری کے لیے معاہدوں کا اعلان کیا گیا ہے۔ متحدہ عرب امارات نے امریکا میں تیا کیے جانے والے 150 بوئنگX777 طیارے خریدنے کے ایک معاہدے کی تیاری مکمل کرلی ہے۔ اس معاہدے پر کم سے کم 67 ارب ڈالر کی لاگت آئے گی۔ یو اے ای کی "الاتحاد" ایئرلائن نے بھی اپنے طور پر بوئنگ 777 طرز کے پچیس طیارے خریدنے کا عزم کیا ہے۔

ایئرشو کمیٹی کے چیئرمین الشیخ احمد بن سعید آل مکتوم نے بتایا کہ ہوائی جہازوں کی عالمی نمائش سے خلیجی فضائی کمپنیوں کوایک اچھا موقع ملا ہے۔ توقع ہے کہ اس نمائش کے دوران کم سے کم دو سو ارب ڈالر سے زائد کے معاہدے کیے جائیں گے۔ متحدہ عرب امارات خود ایک بڑے معاہدے کے تحت نئے طیارے خریدنے جا رہا ہے۔ بن سعید نے بتایا کہ نمائش کے دوران صرف مسافر طیارے ہی نہیں بلکہ جنگی جہاز اور کارگو طیارے خریدنے کی بھی توقعات ہیں۔ مختلف خلیجی ملکوں نے نمائش کی انتظامی کمیٹی سے رابطے شروع کردیے ہیں۔ امید ہے جلد مزید معاہدے ہوں گے۔

یاد رہے کہ حال ہی میں متحدہ عرب امارات نے یورپی ائیر بس کمپنی سے تیس ارب ڈالر کی مالیت سے ایئر بس E380 ماڈل کے پچاس طیاروں کی خریداری کا ایک معاہدہ کیا ہے۔

دبئی ایئرشو کے حوالے سے فرانسیسی وزیر دفاع جون ایف لوڈریان نے "العربیہ" سے گفتگو کرتے ہوئے اسے خطے کی سب سے بڑی فضائی نمائش قرار دیا۔ انہوں نے یو اے ای پرزور دیا کہ وہ فرانس کے تیارکردہ "راوال" طیارے بھی خریدے۔ فرانسیسی وزیر نے بتایا کہ دونوں ملکوں کے درمیان مسافر طیاروں کی خریداری کے حوالے سے بات چیت جاری ہے۔ تاہم اس میں کوئی معاہدہ طے پانے میں زیادہ وقت بھی لگ سکتا ہے۔

نمائش میں متحدہ عرب امارات کے اپنے تیارکردہ طیارے بھی شامل ہیں۔ ان میں اپاچی EH64D ہیلی کاپٹر فوجی کارگو طیارہ "سی 17" خاص طور پر توجہ کے مرکز ہیں۔