.

خلیجی ممالک کو 10 سال میں 20 ہزار ہوابازوں کی ضرورت پڑے گی

ایک ارب ریال کی مالیت سے ریاض ایوی ایشن اکیڈیمی کا قیام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں فضائی سروسز کے لیے تربیت فراہم کرنے والے ادارے الفا اسٹار اور مملکت کے محکمہ شہری ہوابازی کے مابین ایک معاہدہ طے پایا ہے۔ معاہدے کے تحت الفا اسٹار سول ایوی ایشن اتھارتی کو ریاض میں فضائی سروسز کے لیے ایک مرکز اور تربیت گاہ کے قیام میں مدد فراہم کرے گا۔

"العربیہ" ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے الفا اسٹار کے چیئرمین سالم عبید المزینی نے کہا ہے ان کا ادارہ، سول ایوی ایشن اتھارٹی کے تعاون سے ریاض میں چالیس ہزار مربع میٹر پر محیط ایک سینٹر قائم کرنے میں مدد دے گا جہاں ہوابازی کی پیشہ وارانہ ٹریننگ دی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ ریاض میں قائم کی جانے والی ایوی ایشن اکیڈیمی پر کم سے کم ایک ارب ریال کی لاگت آئے گی۔ یہ اکیڈیمی شہری دفاع کی ضروریات اور مزید افراد کو تربیت دینے کی ضرورت کے پیش نظر قائم کی جا رہی ہے۔

ایک اور سوال کے جواب میں المزینی نے بتایا کہ ریاض ایوی ایشن سروس سینٹر کے پروجیکٹ میں الفا اسٹارکے ساتھ "infinity" کمپنی بھی شامل ہو گی جو ماضی میں بھی اس نوعیت کے منصوبوں پر کام کا تجربہ رکھتی ہے۔

انہوں نے امکان ظاہر کیا ہے کہ آئندہ دس برسوں کے دوران ایوی ایشن صنعت کے پھیلاو کے باعث سعودی عرب سمیت تمام خلیجی ریاستوں میں ہوابازوں کی طلب میں اضافہ ہو گا۔ مجموعی طور پر دس سال میں کم سے کم بیس ہزار نئے ہوابازوں کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔