لبنان:وادع بقاع میں 400 کلوگرام بارود سے لدی کار پکڑی گئی

نامعلوم کار سوار فوج سے فائرنگ کے تبادلے کے بعد فرار ہونے میں کامیاب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لبنانی فوج نے وادی بقاع کے مشرق میں شیعہ جنگجو تنظیم حزب اللہ کے مضبوط گڑھ سمجھے جانے والے علاقے میں ایک مشتبہ کار پکڑی ہے اور اس میں نصب 400 کلوگرام وزنی بم کو ناکارہ بنا دیا ہے۔

لبنان کے ایک سکیورٹی ذریعے نے بتایا ہے کہ فوجیوں نے وادی بقاع کے مشرق میں جمعہ کی صبح شک گزرنے پر ایک مشتبہ کار کا پیچھا کیا تھا لیکن اس میں سوار افراد نے فوجیوں پر فائرنگ کردی اور فوجیوں کی جوابی فائرنگ کے بعد وہ کار کو بھگا لے جانے میں کامیاب ہوگئے۔

بعد میں فوجیوں کو یہ کار وادی بقاع کے دودیہات مقنع اور یونین کے درمیان واقع شاہراہ سے ملی ہے اور اس کے ٹائر پھٹے ہوئے تھے۔اس میں سے 400 کلوگرام دھماکا خیز مواد برآمد ہوا ہے جس کو فوجیوں نے ناکارہ بنا دیا ہے۔

فوری طور پر کارسواروں کی شناخت معلوم نہیں ہوسکی ہے اور نہ یہ پتا چلا ہے کہ آیا کہ وہ اس کار کو اس علاقے میں دھماکے سے اڑانا چاہتے تھے یا اس بارودی مواد وہ کہیں اور لے جانا چاہتے تھے۔

بارود سے لدی ہوئی یہ کار لبنان کے سترویں یوم آزادی کے موقع پر اور دارالحکومت بیروت میں ایرانی سفارت خانے کے باہر دو خودکش بم دھماکوں کے تین روز بعد برآمد ہوئی ہے۔ ان دونوں بم دھماکوں میں ایران کے کلچرل اتاشی براہیم انصاری سمیت پچیس افراد ہلاک اور ڈیڑھ سو سے زیادہ زخمی ہوگئے تھے۔دہشت گردی کے اس واقعے کے بعد سے لبنانی فوج ہائی الرٹ ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں