.

یورپی یونین ایران پر عائد پابندیاں دسمبر میں واپس لے گی

کینیڈا نے پابندیاں مستقل معاہدے تک سخت کرنے کا عندیہ دے دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یورپی یونین امکانی طور پر ایران پر عائد پابندیوں کو ماہ دسمبر میں واپس لے گی۔ اس اقدام سے پہلے یورپی ممالک وزارتی سطح پر اس سلسلے میں حکمت عملی کو فائنل کرنے کیلیے تجاویز دیں گے۔

اس امر کا اظہار فرانس کے وزیر خارجہ لاورینٹ فیبئیس نے ایک عالمی خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ہے۔ لاورینٹ فیبئیس کے مطابق وزارتی اجلاس کے بعد یورپی یونین کی 28 رکنی باڈی کے اجلاس میں پابندیاں واپس لینے کی حکمت عملی کو حتمی شکل دی جائے گی۔

فرانس کے اعلی ترین سفارتکار نے اسرائیل کی طرف سے ایران کیساتھ ہونے والے معاہدے کو تاریخی غلطی قرار دیے جانے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ''اسرائیل کی طرف سے ایران پر انسدادی حملے کو اس مرحلے پر کوئی نہیں سمجھ پائے گا۔''

دریں اثناء کینیڈا نے ایران خلاف پابندیاں جاری رکھنے کا عندیہ دیا ہے۔ کینیڈا کے وزیر خارجہ جان بئیرڈ نے واضح کیا کہ ان کا ملک'' ایران پر عاید پابندیوں کو اس وقت تک مزید سخت کرے گا جب تک مستقل معاہدہ نہیں ہو جاتا ہے۔''

واضح رہے جنیوا میں چھ بڑی طاقتوں اور ایران کے درمیان ہونے والے ابتدائی معاہدے کے نتیجے میں ایران کو سات ارب ڈالر کے فوری فائدے کا امکان ہے۔