.

بن غازی: انصار الشرعیہ اور لیبیا کی فوج کی جھڑپیں

متعدد افراد زخمی، دونوں طرف سے قوت جمع کرنے کی کوشش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا میں مزاحمت اور بغاوت کے حوالے سے اہم شہر بن غازی میں بدھ کی صبح سرکاری افواج اور عسکریت پسندوں کے درمیان شروع ہونے والی جھڑپوں میں ابتدائی طور پر متعدد افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ملی ہیں۔

لیبیا کے دوسرے بڑے شہربن غازی میں عسکریت پسندوں کے گروپ انصارالشرعیہ ساتھ سرکاری افواج کی اس لڑائی کا سلسلہ پیر کے روز شروع ہوا تھا۔ اس دوران کم ازکم 9 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

فریقین میں جھڑپ منگل اور بدھ کی درمیانی شب دوبارہ شروع ہو گئی۔ انصارالشرعیہ نامی عسکری گروپ اپنی قوت جمع کر رہا ہے، جبکہ سرکاری افواج اپنی نئی صف بندی میں مصروف ہیں۔

بن غازی میں حالیہ چند مہینوں میں امن و امان کی فضا سخت بگاڑ کی زد میں ہے۔ اس صورت حال کے پیش نظر اکثر ملکوں نے اپنے قونصل خانے بند کر دیے ہیں۔ بعض فضائی کمپنیوں نے بھی اپنی پروازیں روک دی ہیں۔

بن غازی میں عسکریت پسند انصار الشرعیہ گروپ پر امریکی قونصل خانے پر حملے کا الزام لگایا جاتا ہے۔ اس حملے میں امریکی قونصل جنرل اور تین دوسرے لوگ مارے گئے تھے۔ شہر میں سابقہ باغی بھی مسلح انداز میں موجود ہیں، اس صورتحال میں حکومت کو ایک بڑے چیلنج کا سامنا ہے۔