.

سنہ2014 فلسطینیوں سے یکجہتی کا سال قرار دے دیا گیا

یوم یکجہتی فلسطین کی تقریبات سفیر خیرسگالی گانے پر ختم ہوئیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ کے زیراہتمام یوم یکجہتی فلسطین [چھبیس نومبر] کے حوالے سے نیویارک میں منعقدہ تقریبات اپنے اختتام کو پہنچ گئیں۔ امریکی شہر نیویارک میں اقوام متحدہ کے صدر دفتر میں فلسطینیوں کے حقوق کے حوالے سے ہونے والی پروقار تقریب میں نوجوان فلسطینی گلوکار محمد عساف کو خصوصی دعوت پر بلایا گیا تھا۔ محمد عساف کو دو ہزار تیرہ کا 'عرب آئیڈیل' ٹائٹیل جینے کے بعد اقوام متحدہ کی ریلیف ایجنسی برائے پناہ گزین "اونروا" کے سفیر برائے خیرسگالی منتخب کیا گیا تھا۔

نیویارک میں فلسطینیوں کے حقوق کی حمایت میں ہونے والی تقریب میں محمد عساف نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بین کی مون اور دیگراہم عہدیداروں سے بھی ملاقات کی۔ اس موقع پر بین کی مون نے فلسطینی نوجوانوں بالخصوص محمد عساف کی پناہ گزینوں کے حقوق اور ان کا معیار زندگی بہتر بنانے کے لیے جدوجہد کی تعریف کی اور "اونروا" کے فورم سے خیرسگالی کی مساعی جاری رکھنے کی ضرورت پر زور دیا۔

تقریب کے اختتام پر محمد عساف نے اپنی آواز میں فلسطین کا ایک ملی نغمہ پیش کیا، جس کے ساتھ ہی فلسطینیوں کے حقوق کی حمایت میں منعقد ہونے والی تقریب اپنے اختتام کو پہنچ گئی۔

العربیہ ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بین کی مون کی جانب سے جذبہ خیرسگالی کے فلسطینی سفیر اور نوجوان موسیقار محمد عساف کو خصوصی طور پر یوم یکجہتی فلسطین کی تقریبات میں نیویارک میں مدعو کیا تھا۔ محمد عساف کے نیویارک پہنچنے پر اقوام متحدہ کے عملے نے ان کا گرم جوشی سے استقبال کیا۔

تقریب میں جنرل اسمبلی کی جانب سے آئندہ سال 2014ء کو فلسطینیوں سے یکجہتی کا سال قرار دیا گیا۔ اس موقع پر جنرل اسمبلی کے چیئرمین جون آچ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ عالمی ادارے کی جانب سے سال 2014 فلسطینیوں سے یکجہتی کا سال قرار دینے کی تجویز کی حمایت کرتا ہوں۔ عالمی ادارے کی جانب فلسطینیوں کے حقوق کی حمایت کے لیے آئندہ سال کو مخصوص کرنے سے مشرق وسطیٰ میں جاری امن مساعی کو آگے بڑھانے میں بھی مدد ملے گی۔