شامی باغیوں سے لڑائی میں حزب اللہ کے رکن وزیر کا بھتیجا ہلاک

دمشق میں تین حزب اللہ عناصرکے قتل کی تصدیق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لبنان کے وزیر زراعت اور شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے رہ نما حسین الحاج حسین کا ایک بھتیجا اورتنظیم کے تین جنگجو شام میں باغیوں کے ہاتھوں ہلاک ہو گئے ہیں۔

خبر رساں ایجنسی" اے ایف پی" کے مطابق لبنانی وزیر زراعت حسین الحاج حزب اللہ کےاہم رہ نما ہیں۔ان کا تعلق لبنان کے البقاع شہرکےقصبےحوش النبی سے بتایا جاتا ہے۔ حوش النبی کے مقامی باشندوں نے تصدیق کی ہے کہ حال ہی میں وزیر زراعت کے بھتیجے اور حزب اللہ کے تین دیگرجنگجو شام کے شہر القلمون میں باغیوں کے ساتھ جھڑپ میں ہلاک ہوگئے تھے۔ وزیر زراعت کے بھتیجے کی میت حوش النبی پہنچائی گئی اور اسے راز داری میں سپرد خاک کیا گیا ہے۔

ایک مقامی شہری نے اپنی شناخت ظاہرنہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ شام میں حزب اللہ کی طرف سے بشارالاسد کی حمایت میں لڑنے کے لیے وزیر زراعت کا 22 سالہ بھتیجا علی رضا فواد الحاج حسین بھی جنگ میں شریک تھا۔ بدھ کے روز شمالی دمشق میں القلمون کالونی میں باغیوں اور حزب اللہ جنگجوؤں کے درمیان ہونے والی جھڑپوں میں علی رضا فواد ہلاک ہوگیا تھا۔ اس معرکے میں حزب اللہ کے تین دیگر جنگجو بھی مارے گئے تھے۔ تاہم ان تینوں کی میتیں لبنان نہیں لائی گئیں۔

خیال رہے کہ شمالی دمشق میں القلمون کے علاقے میں نومبرکے وسط میں باغیوں اور سرکاری فوج کے درمیان گھمسان کی جنگ ہوئی تھی جس کے بعد بشارالاسد کی وفادار فوجوں اور جنگجوؤں نے باغیوں کو القلمون سے پسپا کردیا تھا، تاہم گذشتہ ہفتے دونوں طرف سے دوبارہ جھڑپیں شروع ہوگئی تھیں، جن میں دونوں طرف جنگجوؤں کے مارے جانے کی اطلاعات آئی تھیں۔ یاد رہے کہ شام میں حزب اللہ کی کمان میں لڑتے ہوئے اب تک درجنوں افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں