.

مصری فورسز نے قاہرہ کے نزدیک کار میں نصب بم ناکارہ بنا دیا

نامعلوم افراد فوج کے ملکیتی پٹرول اسٹیشن کے نزدیک کار کھڑی کرکے لاپتا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے دارالحکومت قاہرہ کے نزدیک سکیورٹی فورسز نے ایک کار میں نصب بم کو ناکارہ بنا دیا ہے۔

وزارت داخلہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ سویز شہر کی جانب جانے والی شاہراہ پر واقع ایک پٹرول اسٹیشن کے نزدیک سے ایک چوری شدہ کار کو برآمد ہوئی ہے اور اس میں تیار حالت میں بم نصب تھا۔

فوج کے ملکیتی اس پٹرول اسٹیشن کے ایک ملازم نے تین افراد کو اس کار کو وہاں کھڑا کرتے ہوئے دیکھا اور وہ پھر وہاں سے پیدل غائب ہوگئے۔سکیورٹی حکام کا کہنا ہے کہ مشتبہ حملہ آور اس کار میں نصب بم سے قریب سے گزرنے والے ایک قافلے کو نشانہ بنانا چاہتے تھے۔

واضح رہے کہ 5 ستمبر کو وزیرداخلہ محمد ابراہیم کے قافلے پر بم حملہ کیا گیا تھا لیکن وہ اس حملے میں محفوظ رہے تھے۔20 نومبر کو جزیرہ نما سینا میں سڑک کے کنارے نصب بم سے سکیورٹی فورسز کی ایک بس کو نشانہ بنایا گیا تھا۔اس واقعے میں گیارہ فوجی ہلاک ہوگئے تھے۔

مصر کے منتخب صدر ڈاکٹر محمد مرسی کی 3 جولائی کو مسلح افواج کے سربراہ جنرل عبدالفتاح السیسی کے ہاتھوں برطرفی کے بعد سے مسلح جنگجو سکیورٹی فورسز کو اپنے حملوں میں نشانہ بنا رہے ہیں۔خاص طور پر اسرائیل اور غزہ کی سرحد کے ساتھ واقع مصر کے شمال مشرقی علاقے سیناء میں جنگجوؤں کے حملوں میں بیسیوں فوجی اور پولیس اہلکار ہلاک ہوچکے ہیں۔