بشارالاسد ہی صدارت پر برقرار رہیں گے: وزیر اطلاعات شام

جنیوا ٹو کی تاریخ مقرر ہونے کے بعد پہلی مرتبہ دوٹوک اظہار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شام کے وزیر اطلاعات عمران الزعبی نے کہا ہے کہ صدر بشارالاسد ہی شامی صدارت پر برقرار رہیں گے اور عبوری اتھارٹی کی قیادت بھی وہی کریں گے۔'' واضح رہے شام کیلیے عبوری حکومت کا فیصلہ اگلے ماہ جنیوا ٹو میں کیا جانا ہے۔

ایک لبنانی ٹی وی کو دیے گئے انٹرویو میں بشارالاسد کے وزیراطلاعات کا کہنا تھا جنیوا ٹو میں شامی حکومت کا وفد بشارالاسد کی ہدایات کے مطابق حصہ لے گا۔ انہوں نے کہا ''بشار الاسد ہی عبوری دور کے لیڈر ہوں گے۔''

شام کی خبر رساں ایجنسی کے مطابق وزیر اطلاعات نے کہا '' تعاون ضرورت بھی ہے اور فرض بھی ہے، حکومتوں کا یہ حق ہوتا ہے کہ وہ اپنے ملک کا دہشت گردوں سے دفاع کرے۔''

واضح رہے شام کی خانہ جنگی میں 2011 سے اب تک ایک لاکھ چھبیس ہزار لوگ مارے جا چکے ہیں ۔ اب دونوں فریق 22 جنوری کو جنیوا ٹو میں شرکت پر تیار ہیں۔ لیکن عبوری دور میں بشارالاسد کا کوئِی کردار قبول کرنے کو اپوزیشن کسی صورت آمادہ نہیں ہے۔

اپوزیشن اتحاد ایسی عبوری حکومت کا مطالبہ کرتی ہے کہ عبوری حکومت مکمل با اختیار مگر بشارالاسد کے بغیر ہونی چاہیے۔ دوسری جانب جنیوا ٹو کی تاریخ طے ہونے کے بعد شامی حکومت کے کسی بھی ذمہ دار نے پہلی مرتبہ دوٹوک کہا ہے کہ بشارالاسد کے سیاسی اور حکومتی کردار میں کوئی کمی نہیں ہو گی ۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں