.

شیخ خلیفہ بن زید نے ایران کے دورے کی دعوت قبول کر لی

دورے کی دعوت ایرانی وزیر خارجہ نے دورہ امارات کے موقع پر دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کے شیخ خلیفہ بن زید بن النہیان نے دورہ ایران کی دعوت قبول کر لی ہے۔ دورے کی دعوت ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے دی ہے، جواد ظریف آج کل چھ بڑی طاقتوں کے ساتھ جنیوا میں جوہری تنازعہ پرابتدائی معاہدے کے بعد امارات کے دورے پر آئے ہیں۔

واضح رہ ان دنوں ایران عرب ملکوں کے ساتھ اپنے تعلقات کی بہتری کیلیے کوشاں ہے۔ اس مقصد کی خاطر جواد ظریف نے پہلے کویت، اومان اور قطر کا دورہ کیا ہے اوراب ابو ظہبی پہنچے ہیں۔

عرب ملکوں کو شبہات ہیں کہ ایران جوہری اسلحے کی تیاری کر رہا ہے۔ جبکہ ایران ان الزامات کی تردید کرتا ہے اور نئے حالات میں عرب دنیا سے مقابلتا بہتر تعلقات کی خواہش کا اظہار کر رہا ہے۔

ایرانی وزیر خارجہ سعودی عرب کی قیادت کے ساتھ بھی رابطے کر کے اپنی پوزیشن کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں، تاہم انہوں نے شیخ خلیفہ بن زید بن سلطان کو ایرانی دورے کی دعوت ایک ون آن ون ملاقات میں دعوت دی ہے۔ شیخ خلیفہ نے دورہ ایران کی دعوت قبول کر لی ہے البتہ اس دورے کی تاریخ بعد میں طے ہو گی۔

اس موقع پر امارات کے سربراہ نے ایران کے جوہری معاہدے کا خیر مقدم کیا اور کہا ہماری قوم علاقے کے استحکام، سلامتی اور ملکوں کے باہمی تعاون پر یقین رکھتی ہے۔

ایرانی وزیر خارجہ کا کہنا تھا '' صدر روحانی خلیجی ممالک کے ساتھ تعلقات کو مضبوط بنانا چاہتے ہیں۔'' انہوں نے مزید کہا '' ایران پڑوسی ملکوں کے ساتھ تعلقات کو بہت اہمیت دیتا ہے۔'' ایرانی جوہری معاہدے کے بارے میں جواد طریف نے کہا'' یہ خطے کے مفاد میں ہے۔''